’کائنات اور شازیہ کو سوات سے منتقل کرنے کی پیشکش‘

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 6 دسمبر 2012 ,‭ 08:49 GMT 13:49 PST

پاکستان کے صوبہ خیبر پختونخوا کے علاقے سوات میں طالبان کے حملے میں زخمی ہونے والی دو طلبہ کائنات اور شازیہ کو صوبائی حکومت نے منتقل کرنے کی پیشکش کی ہے۔

واضح رہے کہ اکتوبر میں طالبان نے ملالہ یوسفزئی پر فائرنگ کی تھی جس میں ملالہ سمیت کائنات اور شازیہ زخمی ہو گئی تھیں۔

بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کائنات کے والد ریاض احمد نے بتایا کہ صوبائی حکومت نے رابطہ کر کے پیشکش کی ہے کہ سکیورٹی وجوہات کے باعث ان کو کسی اور شہر منتقل کیا جاسکتا ہے۔

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔