افغانستان: خواتین کے خلاف تشدد ، سزائیں نہیں ملتی

آخری وقت اشاعت:  منگل 11 دسمبر 2012 ,‭ 06:19 GMT 11:19 PST

اقوام متحدہ کی طرف سے جاری ایک رپورٹ کے مطابق افغانستان میں خواتین پر تشدد کرنے والے زیادہ تر افراد کو اب بھی سزائیں نہیں ملتیں۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اس سال خواتین کے خلاف تشدد کے درج شدہ واقعات میں تیس فیصد اضافہ ہوا ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ خواتین کے خلاف تشدد کے اکثر واقعات کی اطلاع نہیں دی جاتی اور سنگین جرائم کے فیصلے مردوں کے جرگوں میں ہوتے ہیں۔

رپورٹ میں مزید بتایا گیا ہے ہے کہ خواتین کے تحفظ کے لیے تین سال پہلے بنائے گئے قانون کو اکثر نظر انداز کیا جاتاہے۔

صوبہ لغمان میں پیر کے دن بھی ایک سینیئر سرکاری اہل کار خاتون کو نامعلوم افراد نے ہلاک کر دیا۔

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔