چارسدہ: دھماکے میں بشیر عمرزئی سمیت چودہ زخمی

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 12 جنوری 2013 ,‭ 07:59 GMT 12:59 PST

عوامی نیشنل پارٹی کے رہنما بارودی سرنگ کے دھماکے میں زخمی ہو گئے

صوبہ خیبر پختونخواہ کے ضلع چارسدہ میں بارودی سرنگ کے دھماکے میں عوامی نیشنل پارٹی کے رہنما بشیر عمرزئی سمیت چودہ افراد زخمی ہو گئے۔

ہمارے نمائندے کا کہنا ہے کہ دھماکہ سنیچر کی صبح اس وقت ہوا جب بشیر عمرزئی چارسدہ کے مقامی عدالت میں پیشی کے بعد واپس جار ہے تھے۔

مقامی بولیس افسر ظفر خان نے بی بی سی کو بتایا کہ دھماکے میں عوامی نیشنل پارٹی کے رہنما بشیر خان عمرزئی اور ان کے صاحبزادے سمیت ان کے کئی دوسرے رشتہ دار زخمی ہو گئے۔

انہوں نے کہا کہ اس دھماکے میں عوامی نیشنل پارٹی پارٹی کے ضلعی صدر ظفراللہ بھی زخمی ہو گئے۔

مقامی پولیس کے مطابق بارودی سرنگ کا دھماکہ چارسدہ کے علاقے عمرزئی میں ہری چند روڈ پر ہوا۔

ان کا کہنا تھا کہ دھماکے میں دو پولیس اہلکار بھی زخمی ہو گئے۔

تحریک طالبان پاکستان کے ترجمان احسان اللہ احسان نے بی بی سی کو ٹیلیفون کر کے اس حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ آئندہ بھی عوامی نیشنل پارٹی کے رہنماؤں کو نشانہ بنائیں گے۔

اس دھماکے کے بعد پولیس کی بھاری نفری جائے وقوعہ پر پہنچ گئی اور علاقے میں سرچ اپریشن شروع کیا۔

زخمیوں کو مقامی ہسپتال میں منتقل کیا گیا۔

مقامی پولیس کا کہنا ہے کہ تحقیقات جاری ہیں تاہم ابھی تک کوئی گرفتاری عمل میں نہیں لائی گئی ہے۔

یاد رہے اس سے پہلے عوامی نیشنل پارٹی کے سینئر رہمنا بشیر احمد بلور بھی پشاور میں دسمبر میں ایک خودکش حملے ہلاک ہو گئے تھے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔