حکومت کے مظاہرین کے ساتھ مذاکرات، دھرنا جاری

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 12 جنوری 2013 ,‭ 15:38 GMT 20:38 PST

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں جمعرات کو ہوئے ایک خودکش حملے اور ایک کار بم دھماکے میں ہلاک ہونے والے شیعہ ہزارہ افراد کی تدفین نہیں کی گئی ہے اور احتجاج جاری ہے۔

وفاقی وزیر برائے مذہبی امور سید خورشید شاہ اور گورنر بلوچستان نواب ذوالفقار مگسی نے علمدار روڈ پر مظاہرین کے ساتھ مذاکرات کیے۔

مذاکرات کے بعد وفاقی وزیر نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ مذاکرات کی کامیابی اور ناکامی کا معاملہ نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ حملے روکنے چاہیئیں اور وزیر اعظم نے ایف سی کو بلوچستان میں پولیس کی پاورز دے دی ہیں اور آپریشن کیا جائے گا۔

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔