بنگلہ دیش میں مسلم عالم کو سزائے موت

آخری وقت اشاعت:  پير 21 جنوری 2013 ,‭ 07:17 GMT 12:17 PST

بنگلہ دیش میں حکومتی ٹربیونل نے ایک اہم مسلم عالم کو پاکستان سے آزادی کی جنگ کے دوران انسانیت کے خلاف جرائم پر موت کی سزا سنائی ہے۔

استغاثہ کا کہنا ہے کہ اسلامی ٹی وی کے سابق میزبان مولانا عبدالکلام آزاد نے نہ صرف سنہ انیس سو اکہتر کی جنگِ آزادی میں چھ ہندوؤں کو گولی مار کر ہلاک کیا بلکہ ایک ہندو عورت سے جنسی زیادتی بھی کی۔

عبدالکلام آزاد پر یہ الزامات گزشتہ برس عائد کیے گئے تھے اور خیال کیا جاتا ہے کہ وہ اب ملک سے فرار ہو چکے ہیں۔

ان کے حامیوں کا کہنا ہے کہ یہ الزامات سیاسی بنیادوں پر لگائے گئے ہیں۔

عبدالکلام آزاد وہ پہلے شخص ہیں جنہیں بنگلہ دیشی حکومت کی جانب سے تین برس قبل بنائے جانے والے انٹرنیشنل کرائمز ٹربیونل نے مجرم قرار دیا ہے۔

اقوامِ متحدہ اس ٹربیونل کو تسلیم نہیں کرتی۔

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔