’میکسیکو شہر میں دھماکہ گیس بھرنے سے ہوا تھا‘

آخری وقت اشاعت:  منگل 5 فروری 2013 ,‭ 04:07 GMT 09:07 PST

میکسیکو کے اٹارنی جنرل کے مطابق مسیکسیکو شہر میں جمعرات کو پیمیکس تیل کمپنی کے ہیڈکوارٹر میں ہونے والا دھماکہ گیس بھرنے سے ہوا تھا۔

ملک کے اٹارنی جنرل جیسیس موریلو کارام کے مطابق میسکسیکو شہر میں دھماکہ خیز مواد کا کوئی سراغ نہیں ملا۔

ان کا کہنا تھا کہ ماہرین کا خیال ہے کہ بجلی کی تاروں میں خرابی کو وجہ سے چنگاری پیدا ہوئی جس سے لیک گیس کا دھماکہ ہوا۔

اس واقعے میں ہلاکتوں کی تعداد 37 ہوگئی ہے۔ جبکہ سو سے زائد افراد کا ہسپتال میں علاج کیا جارہا ہے۔

اس دھماکے میں عمارت کے کئی منزل بھی گر گئے تھے۔

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔