مشرف غداری مقدمہ: وکلا کا بینچ پر اعتراض

سابق فوجی صدر پرویز مشرف کے خلاف غداری کے مقدمے کی سماعت کے دوران وکلائے صفائی نے ججوں کے بینچ کے خلاف اعتراض کرتے ہوئے سپریم کورٹ سے استدعا کی ہے کہ اس بینچ کو تبدیل کر دیا جائے۔

وکلا نے کہا کہ چوں کہ اس بینچ نے پی سی او کے تحت حلف اٹھایا ہے اس لیے وہ اس مقدمے میں غیرجانب داری سے سماعت نہیں کر سکیں گے، لہٰذا اس مقصد کے لیے نیا بینچ تشکیل دیا جائے۔

وفاق کی طرف سے تاحال اس اعتراض کا کوئی جواب نہیں دیا گیا۔

جسٹس جواد ایس جواجہ کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے اس تین رکنی بینچ میں جسٹس خلجی عارف حسین اور جسٹس اعجاز افضل شامل ہیں۔