این اے 250 میں’ری الیکشن‘ پر فیصلہ محفوظ

پاکستان الیکشن کمیشن نے کراچی میں قومی اسمبلی کے حلقے این اے 250 میں دوبارہ الیکشن کے معاملے پر فیصلہ محفوظ کر لیا ہے۔

الیکشن کمیشن نے اس حلقے میں دھاندلی اور انتخابی عمل میں تاخیر کی شکایات پر ابتدائی طور پر 45 پولنگ سٹیشنوں پر 19 مئی کو دوبارہ پولنگ کا حکم دیا تھا۔

تاہم ایم کیو ایم نے پورے حلقے میں دوبارہ پولنگ کا مطالبہ کرتے ہوئے الیکشن کمیشن میں درخواست دی تھی۔

جمعہ کو درخواست کی سماعت کے بعد چیف الیکشن کمشنر نے معاملے پر فیصلہ محفوظ کر لیا۔

خیال رہے کہ اس حلقے میں متحدہ قومی موومنٹ کی امیدوار خوش بخت شجاعت اور تحریک انصاف کے امیدور ڈاکٹر عارف علوی کے درمیان مقابلہ تھا۔

تحریک انصاف نے الزام عائد کیا تھا کہ حلقے کے 45 پولنگ سٹیشنوں پر مبینہ طور پر دھاندلی کی گئی، انتخابی عمل تاخیر سے شروع ہوا یا عملہ غیر تربیت یافتہ تھا۔