عراق: بم دھماکوں،خودکش حملوں میں 70 ہلاک

عراقی حکام کا کہنا ہے کہ ملک کے وسطی اور شمالی علاقوں میں بم دھماکوں اور حملوں میں کم از کم 70 افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

حکام کے مطابق پیر کو سب سے پہلے صوبہ دیالہ میں شیعہ اکثریتی قصبے جدیدہ الشط میں دو کار بم دھماکے اور ایک خودکش حملہ ہوا اور ان حملوں میں تیرہ افراد ہلاک اور پچاس زخمی ہوئے۔

اس کے بعد سنّی اکثریتی شہر موصل میں حفاظتی چوکیوں کے قریب ہونے والے کار بم دھماکوں میں کم از کم 24 افراد مارے گئے۔

اس کے علاوہ کرکوک، تاجی اور تکریت میں ہونے والے حملوں میں بھی درجنوں افراد جان سے ہاتھ دھو بیٹھے۔

عراق میں تشدد میں دوبارہ سے اضافہ دیکھا جا رہا ہے جس میں فرقہ وارانہ تشدد نمایاں ہے۔ اقوامِ متحدہ کے مطابق جون 2008 کے بعد سے اب تک گزشتہ ماہ عراق میں سب سے خونی مہینہ ثابت ہوا جب 1045 عراقی شہری اور سکیورٹی اہلکار پرتشدد واقعات میں مارے گئے