پاک امریکہ سٹریٹیجک ڈائیلاگ کے بحالی کی کوشش

پاکستان امریکہ کے سیکرٹری خارجہ جان کیری کے اسلام آباد کے آئندہ دورے کے دوران پاک امریکہ سٹریٹیجک ڈائیلاگ دوبارہ شروع کرنے کی کوشش کرے گا۔

ریڈیو پاکستان نے پاکستانی دفترِ خارجہ کے ترجمان اعزازاحمد چوہدری کے حوالے سے بتایا ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان سٹریٹیجک ڈائیلاگ کونومبر 2011 میں سلالہ چیک پوسٹ پر حملے کے بعد بند کر دیا گیا تھا جسے دوبارہ شروع کرنے کی کوشش کی جائے گی۔

اعزازاحمد چوہدری نے کہا کہ پاک امریکہ سٹریٹیجک ڈائیلاگ کرنے کےلیے دونوں ممالک کے پانچ ورکنگ گروپس تھے۔ انھوں نے کہا کہ اگرجان کیری کے دورے کے دوران سٹریٹیجک ڈائیلاگ دوبارہ شروع کرنے پر اتفاق ہو گیا تو وہ فوری طور پر ان ورکنگ گروپس کی ملاقاتیں کرائیں گے۔

پاکستان نےگزشتہ برس چھبیس نومبر کو سلالہ چیک پوسٹ پر امریکی ہیلی کاپٹرز کے حملے میں چوبیس فوجیوں کی ہلاکت کے بعد افغانستان میں تعینات نیٹو افواج کو پاکستان کے راستے تیل اور دوسری رسد کی فراہمی روک دی تھی۔ اس کے علاوہ صوبہ بلوچستان میں امریکہ کے زیر استعمال شمسی ائر بیس کو خالی کرایا گیا تھا۔

خیال رہے کہ مسلم لیگ کااقتدار میں آنے کے بعد یہ کسی بھی بڑے امریکی عہدے دار کا پہلا دورِ پاکستان ہو گا۔