دنیا بھر میں ’برفانی چاند‘ کے نظارے

فروری میں مکمل چاند کے ساتھ نیم چاند گرہن بھی دیکھنے کو ملتا ہے جسے سنو مون یا برفانی چاند کہا جاتا ہے۔

سنو مون

،تصویر کا ذریعہAFP/Getty

،تصویر کا کیپشن

فروری میں امریکی ریاست فلوریڈا کے شہر اورلینڈو کے قریب مکمل چاند دکھائی دیا۔ اسے ’سنو مون’ یعنی برفانی چاند کا نام دیا گیا کیونکہ امریکہ میں روایتی طور پر یہ مہینہ شدید برفباری کا ہوتا ہے۔

،تصویر کا ذریعہAP

،تصویر کا کیپشن

’برفانی چاند’ خفیف سے چاند گرہن سے بھی مماثلت رکھتا ہے۔ ایسا تب ہوتا ہے جب چاند زمین کے سائے کے بیرونی حصے سے گزرتا ہے۔ یہ نظارہ پاکستان کے شہر لاہور میں بھی دیکھنے کو ملا۔

،تصویر کا ذریعہEPA

،تصویر کا کیپشن

میکسیکو کی ریاست مچواکان میں چاند سائے میں دکھائی دے رہا ہے کیونکہ سورج اور چاند کے درمیان زمین موجود ہے۔

،تصویر کا ذریعہReuters

،تصویر کا کیپشن

اس برس نیم چاند گرہن غیر معمولی ہے کیونکہ چاند نے زمین کے سائے کو پار کیا ہے جس کی وجہ سے وہ وربالیز اور لیتھوانیا سے زیادہ گہرے پردے میں دکھائی دے رہا ہے۔

،تصویر کا ذریعہAP

،تصویر کا کیپشن

فلوریڈا میں ویسٹ پام کے ساحل پر جب امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور جاپان کے وزیراعظم شنزو آبے اپنی اہلیہ کے ساتھ پہنچے تو اس وقت آسمان پر برفانی چاند موجود تھا۔

،تصویر کا ذریعہAFP/Getty

،تصویر کا کیپشن

ملائیشیا کے شہر کوالالمپور میں درختوں کے جھنڈ کے پیچھے چھپے برفانی چاند۔ کا منظر۔

،تصویر کا ذریعہAP

،تصویر کا کیپشن

برفانی چاند کا ایک اور منظر جسے امریکی ریاست کینسس میں کیمرے کی آنکھ نے محفوظ کیا۔