سیم سنگ کو چودہ ارب ڈالر منافع کی توقع، 2016 سے 64 فیصد زیادہ

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption سیم سنگ کے مالکان پر کرپشن کے الزامات بھی سامنے آئے ہیں

بجلی کی مصنوعات بنانے والی دنیا کی بڑی کمپنیوں میں سے ایک سیم سنگ الیکٹرانکس سنہ 2017 کی آخری سہ ماہی میں چودہ ارب ڈالر کی آمدن کی توقع کر رہی ہے۔

سیم سنگ جس کے گزشتہ سال کی آخری سہ ماہی کے منافع کے حتمی حجم کا حساب ابھی کیا جانا باقی ہے توقع کر رہی کہ اس کا منافع سنہ 2016 کے مقابلے میں چونسٹھ فیصد زیادہ ہو گا۔

جنوبی کوریا کی کمپنی سیم سنگ کے سالانہ منافع میں یہ ریکارڈ اضافہ اس کے ڈائریکٹرز کے کرپشن میں ملوث ہونے کے سکینڈل کے سامنے آنے کے باوجود ہوا ہے۔

کمپنی کے بارے میں ماہرین کا اندازہ تھا کہ اس کا سالانہ منافع پندرہ اعشاریہ نو کھرب ڈالر تک پہنچ جائے گا لیکن اصل منافع اندازوں سے قدرے کم رہا ہے۔

کمپنی کے سلانہ منافع میں اضافہ کا رجحان اس سال برقرار رہا کیونکہ کمپیوٹر کی میموری چپ کی قیمتیں بڑھتی رہیں۔

لیکن سنہ دوہزار اٹھارہ میں صورت حال غیر یقینی رہنے کا امکان ہے کیونکہ گذشتہ سال نومبر میں کمپنی کے حصص کی قیمتیں اپنی اونچی ترین سطح پر جانے کے بعد دو فیصد گر گئی ہیں۔

دریں اثنا کمپنی کے سمارٹ فونز اور موبائل آلات کو اب چینی مصنوعات سے شدید مقابلے کا سامنا ہے۔

اسی بارے میں