کائیلی جینر کی ایک ٹویٹ سے سنیپ چیٹ کو کروڑوں ڈالر کا نقصان

کائیلی جینر تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption کائیلی جینر کے ٹوئٹر پر تقریبا دو کروڑ 45 لاکھ فالوورز ہیں

امریکی ٹی وی سٹار کائیلی جینر کی جانب سے سوشل نیٹ ورکنگ ایپ سنیپ چیٹ استعمال نہ کرنے کے اعلان کے بعد بازارِ حصص میں کمپنی کی قدر میں 1.3 ارب ڈالر کی کمی دیکھی گئی ہے۔

ریالٹی سٹار کم کارڈیشیئن کی سوتیلی بہن کائیلی جینر نے ٹوئٹر پر اپنے ایک پیغام میں کہا تھا کہ ’کیا کوئی اور بھی سنیپ چیٹ اب نہیں استعمال کرتا؟ یا ایسا صرف میں ہی کرتی ہوں، یہ بہت افسوس ناک ہے۔‘

کائیلی جینر کے ٹوئٹر پر تقریبا دو کروڑ 45 لاکھ فالوورز ہیں اور ان کی ایک ٹویٹ کے بعد سنیپ چیٹ کے حصص گرنا شروع ہوگئے۔

خیال رہے کہ سنیپ چیٹ نے حال ہی میں اپنی ایپ کا ڈیزئن تبدیل کیا ہے اور اس ڈیزائن کی تخفیف کے لیے تقریباً دس لاکھ افراد ایک آن لائن پٹیشن دائر کر چکے ہیں۔

سنیپ چیٹ کے حصص میں تقریباً آٹھ فیصد کمی کے بعد وال سٹریٹ میں دن کا اختتام چھ فیصد کمی پر ہوا، اور اب وہ دوبارہ 17 ڈالر کی اسی قیمت پر پہنچ گیا ہے جو کمپنی کے سٹاک مارکیٹ میں قدم رکھنے کے وقت تھی۔

سنیپ چیٹ کو فیس بک کی ملکیتی ایپ انسٹاگرام سے پہلے ہی سخت مقابلے کا سامنا ہے اور کائیلی جینر کا یہ ردعمل ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب سرمایہ کار پہلے ہی اس بارے میں پریشان تھے۔

تاہم کائیلی جینر نے اس کے بعد ایک اور ٹویٹ کیا جس میں انھوں نے کہا کہ ’پھر بھی مجھے سنیپ چیٹ سے پیار ہے،میرا پہلا پیار۔‘

سنیپ چیٹ نے نومبر میں کی جانے والی ڈیزائن کی تبدیلی سے متعلق شکایات کو رد کر دیا ہے، اور اس کے سربراہ ایون سپیگل کا رواں ماہ کے آغاز میں کہنا تھا کہ صارفین وقت کے ساتھ اس کے عادی ہوجائیں گے۔

اسی بارے میں