ماؤنٹ ایورسٹ سے 100 ٹن کوڑے کرکٹ کی صفائی کی مہم کا آغاز

پہاڑ تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption اس تصویر میں 8000 میٹر کی بلندی پر شرپا پہاڑ کی صفائئ کرتے ہوئے نظر آرہے ہیں

نیپال میں واقع دنیا کے سب سے اونچے پہاڑ ماؤنٹ ایورسٹ کی صفائی کرنے کی مہم کا آغاز ہو گیا ہے۔

منصوبے کے تحت 100 ٹن کوڑے کرکٹ کو ہوائی جہازوں کی مدد سے پہاڑ سے نیچے لایا جائے گا۔

مہم کے پہلے دن 1200 کلو گرام کا کوڑا لکلا ہوائی اڈے سے ملک کے دارالحکومت کھٹمنڈو ری سائیکلنگ کے لیے لایا گیا۔

واضح رہے کہ ماؤنٹ ایورسٹ پر بڑی تعداد میں کوہ پیما چوٹی کو سر کرنے کی کوشش کرنے آتے ہیں اور اس دوران وہ اپنے ساتھ لایا ہوا سامان اور مختلف قسم کا کوڑا پہاڑ پر چھوڑ کر چلے جاتے ہیں حالانکہ قوانین کے مطابق انھیں تمام کچرے کو واپس لانا ہوتا ہے۔

ہر سال مقامی گائیڈز بڑی تعداد میں پہاڑ سے کوڑے کی صفائی کرتے ہیں۔

اس سال ماؤنٹ ایورسٹ کی صفائی کے شروع کی جانے والی مہم کے تحت ان اشیا پر توجہ مرکوز ہے جسے کھٹمنڈو لا کر ری سائیکل کیا جا سکے۔

یہ مہم پورے سال جاری رہے گی۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption مہم کے پہلے روز 1200 کلوگرام کوڑا پہاڑ سے نیچے لایا گیا

ماؤنٹ ایورسٹ پر چھوڑے جانے والے کچرے میں بیئر کے کین اور بوتلیں، کھانے کے ڈبے اور کوہ پیمائی کے لیے استعمال ہونے والا وہ سامان جو خراب ہو چکا ہوتا ہے، شامل ہوتا ہے۔

ماؤنٹ ایورسٹ کو صاف کرنے کے لیے ایسے مختلف پروگرام کئی دہائیوں سے جاری ہیں لیکن اب انھیں سگرماتھا پولشن کنٹرول کمیٹی (ایس پی سی سی ) کے نام سے یکجا کر دیا گیا ہے۔ سگرماتھا نیپالی زبان میں ماؤنٹ ایورسٹ کا مقامی نام ہے۔

پہاڑ سر کرنے والے گائیڈ، جنھیں شرپا کہا جاتا ہے، وہ اس مہم کا مرکزی حصہ ہوتے ہیں جو پہاڑ کی صفائی کرتے ہیں۔

ایس پی سی سی کے مطابق ہر سال ایک لاکھ افراد اس خطے کا رخ کرتے ہیں جن میں سے 40 فیصد کوہ پیما ہوتے ہیں۔

کوہ پیمائی کا سامان اور کوڑے کرکٹ کے علاوہ ایس پی سی سی کو انسانی فضلے کو بھی ٹھکانے لگانا ہوتا ہے۔

متعلقہ عنوانات