کیا آپ نے کبھی ایسا سمندر دیکھا ہے؟

طوفانوں میں گھرے لائٹ ہاؤس سے صبح سویرے پرسکون سمندر میں تیراکی تک۔ برطانوی سمندروں کے مناظر دیکھیے

A ship is capsized against a long wooden pier at Cart Gap, Norfolk تصویر کے کاپی رائٹ Chris Herring
Image caption اس انعام یافتہ تصویر میں کرس ہیرنگ نے نورفوک کے ساحل پر خشکی پر چڑھ آنے والی کشتی کو عکس بند کیا ہے۔ انھوں نے اپنی تصویر کا عنوان 'آخر تک بقا کی جنگ' رکھا ہے
The Seaham lighthouse is surrounded by waves and the sea تصویر کے کاپی رائٹ Owen Humphreys
Image caption اوئن ہمفری کی اس تصویر میں ڈرہم کا سیہم لائٹ ہاؤس طوفانی لہروں میں گھرا دیکھا جا سکتا ہے
Two fishermen on board the Guardian Angell boat in the Shetlands تصویر کے کاپی رائٹ Gareth Easton
Image caption گیرتھ ایسٹن نے لی اوڈی کی یہ تصویر اس وقت اتاری جب وہ اپنے ٹرالر گارڈیئن اینجل پر وائٹ فش پکڑ رہے تھے۔ یہ تصویر جزائر شٹ لینڈ سے 30 کلومیٹر دور کھلے سمندر میں بنائی گئی۔
A fisherman looks out over a lighthouse on the coast of Anglesey in North Wales تصویر کے کاپی رائٹ Rob Amsbury
Image caption راب ایمسبری کی تصویر 'کلیئر کمیونیکیشن' کا موضوع شمالی ویلز میں اینگلیسی کا ساؤتھ سٹیک لائٹ ہاؤس تھا
A woman has an early morning swim in the sea with cliffs behind her تصویر کے کاپی رائٹ Teri Pengilley
Image caption 13 سالہ لوسی صبح پانچ بچے ڈوور کے ساحل کے قریب تیراکی کر رہی ہے۔ وہ 'سی گالز' نامی گروپ کا حصہ ہیں۔ 13 سے 14 سال کی ان چھ لڑکیوں نے جولائی میں ایک ریلے ٹیم کے طور پر رودبادِ انگلستان کو عبور کیا۔ لوسی کی یہ تصویر ٹیری پینگیلی نے کھینچی۔
A view under the Old Pier in Aberdour, Fife, Scotland. تصویر کے کاپی رائٹ Craig Scott
Image caption کریگ سکاٹ نے یہ تصویر ایبرڈور، فائف میں ایک پرانی گودی کے نیچے ایک پتھریلے ساحل پر لی
A ship in the Bay of Biscay off the Western coast of France تصویر کے کاپی رائٹ John Roberts
Image caption گرین آئل نامی یہ کشتی فرانس کے جنوبی ساحلی علاقے میں خلیج بسکنی میں ٹیونا کا شکار کر رہی ہے۔ جان رابرٹ نے علی الصبح یہ تصویر کھینچی
Two fishermen look out to sea تصویر کے کاپی رائٹ Dave Agnelli
Image caption ڈیو ایگنیلی نے اپنے دو رکنی عملے کی یہ تصویر گنزری کے ساحل سے کچھ دور کھینچی جب وہ ایمی بلیو نامی فشنگ ٹرالر پر سوار تھے
A ship lies at Clift Sound beach تصویر کے کاپی رائٹ Ian Reid
Image caption فروٹ فل بو جزائر شٹ لینڈ کے ماہی گیروں کی ایک کشتی تھی۔ فوٹوگرافر ایئن ریڈ کا کہنا ہے کہ اس کشتی کو 1980 کی دہائی میں کلفٹ ساؤنڈ کے ساحل پر مرمت کے لیے لایا گیا لیکن بحالی کا یہ کام کبھی ہو نہ سکا اور یہ تب سے وہیں موجود ہے۔

تمام تصاویر کے جملہ حقوق محفوظ ہیں۔

متعلقہ عنوانات