’نیند کے مقبول نسخے آپ کی صحت متاثر کر رہے ہیں‘

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption رات میں چار سے پانچ گھنٹے کی نیند ناکافی ہے

ماہرین کا کہنا ہے کہ رات کی نیند کے بارے میں بنائے جانے والے قصے کہانیاں نہ صرف ہماری صحت اور موڈ دونوں کو تباہ کرتے ہیں بلکہ ہماری زندگی کو بھی کم کرتے ہیں۔

نیو یارک یونیورسٹی کی ایک ٹیم نے انٹرنیٹ پر دیے جانے والے رات کی نیند کے سب سے زیادہ مقبول نسخوں کا پتہ لگایا۔

اس کے بعد نیند کے بارے میں بہترین سائنسی شہادتوں پر شائع ہونے والے جائزوں سے ان نسخوں کا موازنہ کیا گیا۔

اچھی نیند کے چھ نسخے

جھول کر سونا صرف بچوں کے لیے فائدہ مند نہیں

'میں جمعے سے اتوار کی شام تک سوتی رہی'

’ادھوری نیند دفتر میں لڑائی اور خراب رویے کا سبب‘

ٹیم کو امید ہے کہ نیند کے بارے میں عام ان قصے کہانیوں کا معائنہ کرنے سے لوگوں کی جسمانی اور ذہنی صحت کو بہتر بنانے میں مدد ملے گی۔

پانچ گھنٹے کی نیند آپکے لیے کافی ہے؟

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption مسلسل پانچ گھنٹے یا اس سے کم نیند آپ کی صحت کے لیے مضر ہے

جرمنی کی چانسلر انگیلا میرکل نے ایک بار کہا تھا کہ وہ رات چار گھنٹے کی نیند کے بعد ایک ہفتے تک کام کر سکتی ہیں۔

تحقیق کاروں کا کہنا ہے کہ رات میں پانچ گھنٹے سے کم نیند صحت کے لیے شدید نقصان دہ ہے۔

ڈاکٹر ربیکا رابنز کا کہنا ہے کہ ’ہمارے پاس اس بات کے ٹھوس شواہد موجود ہیں کہ مسلسل پانچ گھنٹے یا اس سے کم سونے سے آپ کی صحت پر انتہائی مضر اثرات مرتب ہو سکتے ہیں۔ جس میں سٹروک اور دل کے دورے جیسے امراض شامل ہیں۔

ڈاکٹر ربیکا کہتی ہیں کہ ہر رات سات سے آٹھ گھنٹے مسلسل سونے کی کوشش کرنی چاہیے۔

سونے سے پہلے شراب پینے سے رات کی نیند اچھی آتی ہے

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption شراب سے آپ کو فوراً نیند آ جاتی ہے لیکن آپ کی نیند بری طرح متاثر ہوتی ہے

ماہرین کا کہنا ہے کہ اچھی نیند کے لیے رات کے وقت شراب پینے کا نسخہ بھی محض ایک قصہ ہی ہے۔ سونے سے پہلے ایک گلاس وائن، بیئر یا وسکی سے آپ کو نیند آ سکتی ہے لیکن اس سے آپ کی نیند میں خلل پڑتا ہے، نیند کے دوران آپ کی آنکھوں میں حرکت تیز ہوتی ہے جو آپ کی یاداشت اور سیکھنے کی صلاحیت کو متاثر کرتی ہے۔

اس کے علاوہ آپ کا مثانہ بھرا ہوا ہوتا ہے اور آپ کو بار رفع حاجت کے لیے جانا پڑتا ہے۔ یہ بات درست ہے کہ شراب سے آپ کو فوراً نیند آ جاتی ہے لیکن آپ کی نیند بری طرح متاثر ہوتی ہے۔

بستر میں ٹی وی دیکھنے سے آپکو آرام ملتا ہے

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption سونے سے پہلے ٹی وی دیکھنا آپ کی نیند کو متاثر کرتا ہے

کیا آپ کو لگتا ہے کہ سونے سے پہلے ٹی وی دیکھنے سے آپ کو اچھا محسوس ہو گا۔

حقیقت یہ ہے کہ رات دیر تک ٹی وی دیکھنے سے آپ کی نیند پر منفی اثر پڑتا ہے۔

ڈاکٹر رابنز کا کہنا ہے کہ رات کے وقت جب ہم دن بھر کے ذہنی دباؤ اور تھکن کو بھلا کر سونے کی کوشش کرتے ہیں اس وقت ٹی وی دیکھنے سے بے خوابی اور ذہنی دباؤ کا شکار ہو سکتے ہیں۔

ٹی وی کے ساتھ اب سمارٹ فونز اور ٹیبلیٹ بھی موجود ہیں ان سے جاری ہونے والی نیلی روشنی جسم میں پیدا ہونے والے نیند کے ہارمونز کو متاثر کرتی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption اگر کوشش کے بعد بھی نیند نہ آئے تو بستر سے باہر نکل آئیں

اگر آپکو نیند نہیں آرہی جب بھی آپ بستر میں ہی رہیں

اگر آپ کافی دیر سے سونے کی کوشش کر رہے ہیں اور ہزار ہا کوششوں کے باوجود بھی سونے میں ناکام ہیں تو آپ کیا کریں گے؟

جواب ہے کہ آپ یہ کوشش نہ کریں۔

ڈاکٹر رابنز کہتی ہیں کہ ایسے میں بستر سے اٹھ جائیں اور کچھ بے مطلب سا کام کریں۔

سنوز بٹن دبانا

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption فون پر الارم بجتے ہی بستر سے باہر نکل جائیں

ایسا کون ہے جو یہ سوچ کر اپنے فون پر سنوز بٹن نہیں دباتا کہ بستر میں مزید پانچ منٹ سے بہت فرق پڑے گا۔

تاہم ماہرین کا کہنا ہے کہ جیسے ہی الارم بجے ہمیں بستر سے باہر نکل جانا چاہیے۔

ڈاکٹر رابنز کہتی ہیں کہ کوشش کریں کہ سنوز بٹن نہ دبائیں اس سے آپ کا جسم دوبارہ سو سکتا ہے لیکن اس نیند

اچھی نہیں ہو گی۔ الارم بجتے ہی کمرے کے پردے کھول کر خود کو تیز روشنی کے روبرو کریں۔

خراٹے ہمیشہ بے ضرر ہوتے ہیں

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption خراٹے لینا صحت کی مسائل کی جانب اشارہ ہو سکتا ہے

خراٹے بے ضرر ہوتے ہیں لیکن یہ سانس کی عبوری رکاوٹ کی علامت بھی ہو سکتے ہیں۔ خراٹوں سے نیند کے دوران گلے کی دیواریں سکڑتی اور پھیلتی ہیں جس سے کچھ لمحے کے لیے سانس رک سکتی ہے۔

اس سے متاثر لوگوں کو ہائی بلڈ پریشر، ہارٹ اٹیک اور سٹروک کا خدشہ ہو سکتا ہے۔ بلند خراٹے اس کی ایک علامت ہیں۔

ڈاکٹر رابنز کہتی ہیں کہ اپنی صحت اور لمبی عمر کے لیے نیند کو پورا ہونا سب سے اہم ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں