اٹلانٹس کے ساتھ خلا نوردی کا ایک باب ختم

امریکی خلائی شٹل پچیس برس تک زمین اور خلاء کے درمیان سفرکرنے کے بعد آخری بار زمین کے مدار میں بین الاقوامی خلائی سٹیشن سے واپس روانہ ہوئی۔

اٹلانٹس(فائل فوٹو)

امریکی خلائی ادارے ناسا نے کہا کہ وہ بڑھتے ہوئے اخراجات اور سلامتی کے بارے میں خدشات کے پیش نظر خلائی شٹل کو بند کر رہا ہے۔ اب زمین کے مدار میں موجود خلائی سٹیشن تک سامان لانے اور لے جانے کا زیادہ تر کام روسی خلائی شٹل سویوز انجام دے گی۔

اٹلانٹس کے عملے نے ایک ہفتے کے آخری مشن پر نئی تجربہ گاہ خلائی سٹیشن پر پہنچانے کے علاوہ روسی خلائی شٹل کے خلائی سٹیشن پر رکنے کے لیے ’ڈاکنگ پورٹ‘ بھی وہاں لگایا جسے ایک امریکی خلا باز نے ’خلائی محل‘ کا نام دیا۔

خلائی شٹلیں ڈسکوری اور اینڈیور اس سال کے آخر میں اپنی آخری پروازیں کریں گی۔

اسی بارے میں