’کچھ لوگوں کو شراب جلدی کیوں چڑھتی ہے‘

امریکی تحقیق دانوں کا کہنا ہے کہ انہوں نے اس جین کا پتہ چلا لیا ہے جس سے یہ معلوم ہو سکتا ہے کہ کئی لوگوں کو دوسروں کے مقابلے میں شراب کا نشہ جلدی کیوں ہوتا ہے۔

تحقیق دانوں کے مطابق دس سے بیس فیصد لوگوں میں وہ جین پایا جاتا ہے جس سے وہ شراب کی لت سے محفوظ رہتے ہیں۔

تحقیق کے مطابق وہ لوگ جن کو نشہ جلدی ہوتا ہے ان کے نشئی بننے کے امکانات کم ہیں۔

اس تحقیق کے سربراہ نارتھ کیرولائنا یونیورسٹی کے پروفیسر کرک کا کہنا ہے ’جو جین ہم نے دریافت کیا ہے اس سے ہمیں یہ معلومات ملی ہیں کہ شراب نوشی کا دماغ پر کیا اثر ہوتا ہے۔‘

تحقیق کے مطابق زیادہ تر شراب جگر میں جاتی ہے لیکن کچھ شراب دماغ میں CYP2E1 نامی جین پر اثر کرتی ہے۔

تحقیق کے مطابق جن افراد کو جلدی نشہ ہوتا ہے ان میں CYP2E1 جین دماغ پر جلدی اثر انداز کرنے میں مدد کرتا ہے۔

اس تحقیق میں طلبہ کے دو سو جوڑوں نے حصہ لیا جو بہن بھائی تھے۔ ان جوڑوں کے والدین میں سے ایک کو شراب نوشی کی لت لگی ہوئی تھی لیکن ان طلبہ میں ایسا مسئلہ نہیں تھا۔

اسی بارے میں