جعلی سرٹیفیکٹس، ایرانیوں کی جاسوسی

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption ایران میں کمپیوٹر کے ذریعے سینکڑوں جعلی ڈجی نوٹر سرٹیفیکیٹس بنائے جا رہے ہیں

نئے شواہد سے معلوم ہوا ہے کہ چوری ہونے والے ویب سرٹیفیکیٹ ’ڈجی نوٹر‘ کو ممکنہ طور پر ایرانی افراد کی جاسوسی کے لیے استعمال کیا گیا ہے۔

ٹرینڈ مائیکرو کی جانب سے کی جانے والے تحقیق کے مطابق ایران میں جعلی ڈجی نوٹر سرٹیفیکیٹس جاری کیے جا رہے ہیں۔

خیال کیا جا رہا ہے کہ کمپیوٹر کو دھوکہ دینے کے لیے ڈیجیٹل آئی ڈیز کا استعمال کیا گیا تاکہ انہیں (کمپیوٹرز) کو پتہ نہ چل سکے کہ ان کی مدد سے ویب سائٹس جیسے کہ گوگل کو براہِ راست دیکھا جا رہا ہے۔ لیکن حقیقت میں کوئی دوسرا مواصلات کی مانیٹرنگ کر رہا ہوتا ہے۔

نیدرلینڈز کی ڈجی نوٹر کو ہیک کیے جانے کے بعد سینکڑوں کی تعداد میں جعلی ڈجی نوٹر سرٹیفیکیٹس بنائے گئے ہیں۔

ڈجی نوٹر کمپنی امریکی کمپنی واسکو ڈیٹا سکیورٹی کی ملکیت ہے۔

واضح رہے کہ کئی ویب سائٹس صارفین سے توثیق شدہ سرٹیفیکیٹس مانگتی ہیں تاکہ صارفین کو محفوظ رسائی دی جا سکے۔

اسی بارے میں