بڑھاپے کے اثرات زائل کرنے کا علاج دریافت

فائل فوٹو، بڑھاپے  کے اثرات تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption یہ تحقیق چوہوں پر کارگر ثابت ہوئی ہے اور سائنسدان خاصے پرامید ہیں کہ انسانوں پر بھی کارگر ثابت ہوگی۔

سائنسدانوں نے بڑھاپے کے اثرات کو زائل کرنے کا طریقہ علاج دریافت کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔

سائنسی جریدے نیچر میں شائع ہونے والی ایک تحقیق سے ثابت ہوا ہے کہ عمر ڈھلنے کے ساتھ چہرے پر پڑنے والی جھریوں، پٹھوں کی کمزوری اور آنکھوں میں موتیا اترنے کے عمل کو مکمل طور پر ختم کیا جا سکتا ہے۔

فی الوقت یہ تحقیق چوہوں پر کارگر ثابت ہوئی ہے اور سائنسدان خاصے پر امید ہیں کہ انسانوں پر بھی اس طریقہ کار کو استعمال کر کے بڑھاپے کے اثرات کو کم از کم ٹالا ضرور جا سکتا ہے۔

سائنسدانوں نے یہ نتیجہ عمر کے ساتھ ریٹائر ہو جانے والے خلیوں کو تلف کر کے حاصل کیا ہے جو جسم میں رہ جانے کی صورت میں مزید خلیوں کو اپنی طرح ریٹائر کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔

امریکی تحقیق کاروں کا کہنا ہے کہ جسم اس طرح کے دس فیصد خلیوں کو خودکار نظام کے تحت تلف کرتا ہے جبکہ انہوں نے ریٹائر ہونے والے تمام خلیوں کو تلف کر کے یہ نتائج حاصل کیے ہیں۔

سائنسدان اس تجربے کی کامیابی سے خوش تو بہت ہیں لیکن ان کا کہنا ہے کہ انسانی جسم پر اس کے نتائج کی کامیابی کی ضمانت نہیں دی جا سکتی۔

اسی بارے میں

بی بی سی سے