جلد پر زیادہ بالوں سے کھٹمل کم کاٹتے ہیں

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service

ایک نئی تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ جن افراد کی جلد پر بال ہوتے ہیں وہ کھٹملوں کے کاٹے جانے سے محفوظ رہتے ہیں۔

یہ تحقیق بیالوجی لیٹرز جرنل میں شائع ہوئی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ تجربے کے دوران بھوکے کھٹملوں کو ایسے افراد کی جلد پر بھی رکھا گیا جن کی جلد پر بال تھے اور ایسے افراد کی جلد پر بھی رکھا گیا جن کی جلد کے بالوں کو صاف کردیا گیا تھا۔

کھٹملوں کے کاٹنے کا ایسے افراد میں زیادہ پایا گیا جن کی جلد پر بال نہیں تھے۔ تحقیق کاروں کا کہنا ہے کہ جلد پر بالوں کی موجودگی کی وجہ سے کھٹملوں کی رفتار سست ہوجاتی ہے اور جلد پر بالوں کی حساسیت سے کھٹمل کی موجودگی کا علم بھی ہوجاتا ہے۔

برطانیہ میں متعلقہ حکام کا کہنا ہے کہ کھٹملوں کی تعداد میں بہت تیزی سے اضافہ ہورہا ہے۔

اس تحقیق میں شامل پروفیسر مائیکل سیوا جوتھی کا کہنا ہے کہ ان تجربات کے لیے انتیس رضاکاروں کی خدمات حاصل کی گئیں۔

تجربات کے دوران مشاہدہ کیا گیا کہ جلد پر بال ان کیڑوں کے لیے ایک مزاحمتی دیوار کی طرح کام کرتے ہیں جبکہ یہ بال دماغ کو خبردار بھی کرتے ہیں۔

تاہم انہوں نے کہا کہ جن کی جلد پر زیادہ اور موٹے بال ہوتے ہیں وہ ایسے کیڑوں کو چھپنے کا موقع فراہم کرتے ہیں۔ ان کے بقول جلد پر کم یا مناسب بالوں کی موجودگی پیشگی اطلاع کا نظام مہیا کرتی ہے اور جلد سے بالوں کو صاف کرنے سے یہ نظام متاثر ہوتا ہے۔