جیمز کیمرون مریانا ٹرینچ کے سفر سے واپس

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

ہالی ووڈ کے ہدایت کار جیمز کیمرون سمندر میں سب سے گہرے مقام مریانا ٹرینچ کا سفر کر کے لوٹ آئے ہیں۔

مغربی بحرالکاہل میں واقع ماریانا ٹرینچ جہاں سمندر کی گہرائی گیارہ کلومیٹر (سات میل) ہے وہاں تک جیمز کیمرون خصوصی طور پر تیار کردہ ایک آبدوز ’ڈیپ سی چینلنجر‘ میں پہنچے۔

کیمرون کو ماریانا ٹرینچ کی تہہ ’پینتیس ہزار سات سو چھپن فٹ‘ تک پہنچنے میں تقریباً دو گھنٹے لگے اور وہاں سے ان کا پہلا پیغام تھا ’تمام سسٹم ٹھیک کام کر رہے ہیں۔‘

انہوں نے سمندر کی تہہ میں دو گھنٹے گزارے۔ جیمز کیمرون کی آبدوز میں لائٹس اور کمیرے نصب تھے جن کی مدد سے انہوں نے گہرائی میں فلم بندی کی۔

وہ سمندر کی اس قدر گہرائی میں جانے والے دوسرے شخص بن گئے ہیں۔ اس سے پہلے سنہ انیس سو ساٹھ میں پہلی بار کوئی انسان سمندر کے سب سے گہرے مقام پر پہنچنے میں کامیاب ہوا تھا۔

کامیاب فلم ٹائیٹینک کے ہدایت کار جمیز کیمرون نے گہرائی میں اترنے سے پہلے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا ’ اپنے خواب کی تعبیر‘ کرنے جا رہے ہیں۔

فلم ہدایت کار جیمز کیمرون کی گیارہ ٹن وزنی اور سات میٹر لمبی آبدوز کو کئی سال سے خفیہ رکھا جا رہا تھا۔

جیمز کیمرون نے یہ آبدوز آسٹریلوی انجینئروں کی ایک ٹیم کے ساتھ مل کر تیار کی ہے۔

ہالی ووڈ کے ہدایت کار جیمز کیمرون کی آبدوز میں کئی کیمرے اور لائٹس نصب ہیں اور آبدوز کے اندر بیٹھے وہ ان کی مدد سے فلم بندی کر سکیں گے۔

فلم بندی کی مدد سے جیمز کیمرون ایک دستاویزی فلم جاری کرنا چاہتے ہیں۔

اس کے علاوہ آبدوز میں مشینی بازو بھی نصب کیے گئے ہیں جن کی مدد سے وہ پتھروں اور تہہ کے نمونے حاصل کر سکیں گے۔

جیمز کیمرون کے ساتھ سائسندانوں کی ایک ٹیم کام کر رہی ہے جو ان نمونوں پر تحقیق کریں گے اور کسی نئی سمندری حیات کو دریافت کرنے کی کوشش کریں گے۔

جیمز کیمرون کے مطابق ان کے مشن میں سب سے اہم چیز سائنس ہے۔

اگر جیمز کیمرون لاکھوں ڈالر کی اس مہم جوئی میں کامیاب ہو جاتے ہیں تو نصف صدی میں وہ پہلے انسان ہونگے جو سمندر کی تہہ میں پہنچنے میں کامیاب ہوئے۔

اسی بارے میں