سنیتا ولیمز دوسری بار خلائی دورے پر روانہ

سنیتا ولیمز اپنی ٹیم کے اپنے ایک ممبر کے ساتھ تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption سنتیا ولیمز دوسری بار خلائی سفر پر گئی ہیں

بھارتی نژاد امریکی خلاء باز سنیتا ولیمز اور ان کی ٹیم کو لے کر روسی خلائی طیارہ ’سوئز‘ اتوار کی صبح روانہ ہوگیا ہے۔

خلائی طیارہ قزاکستان کے بیکونور خلائی سٹیشن سے بھارتی وقت کے مطابق اتوار کی صبح آٹھ بج کر دس منٹ پر روانہ ہوا ہے۔

یہ خلائی طیارہ منگل کی صبح دس بج کر بائیس منٹ پر عالمی خلائی اڈے یعنی انٹرنیشنل سپیس سینٹر پہنچے گا۔

سنیتا ولیمز اس خلائی سفر ’ایکسپیڈشن 32‘ میں ایک فلائٹ انجینئر کے طور پر گئی ہیں اور انٹرنیشنل سپیس سینٹر پر پہچنے کے بعد وہ خلائی سفر 33 کی کمانڈر ہوں گی۔ فی الوقت اس خلائی سفر کے کمانڈر روسی خلائی ایجنسی کے فلائٹ انجینئر یوری مالینشنکو ہیں۔

سنیتا ولیمز دوسری بار خلائی سفر پر گئی ہیں۔ اس سے قبل وہ سنہ دو ہزار چھ میں بھی خلائی سفر کر چکی ہیں۔ اپنے پہلے خلائی دورے کے دوران سنیتا ولیمز چھ ماہ تک خلاء میں رہی تھیں۔

سنہ انیس سو پیسنٹھ میں امریکی ریاست اوہایو کے شہر یوکلیڈ میں پیدا ہونے والی سنیتا کو انیس سو اٹھانوے میں خلائی پروگرام کے لیے منتخب کیا گيا تھا۔

ان کے والد دیپک پانڈیہ امریکہ میں آباد ہونے سے قبل گجرات کے شہر جوناگڑھ میں ڈاکٹر تھے۔

کلپنا چاولہ کے بعد وہ دوسری ہندوستانی نژاد خلاباز ہیں۔

بیکونور خلائی اڈے سے روانہ ہوئے خلائی جہاز میں سنیتا کے ساتھ روسی خلائی ایجنسی کے فلائٹ انجینئر یوری مالینشنکو اور جاپان ایروسپیس ایکسپلوریشن ایجنسی کے اکیہیتو ہوشیدے بھی شامل ہیں۔

یوری مالینشنکو اپنے ساتھ اپنی بیٹی کی ایک گڑیا بھی لے کر جا رہے ہیں۔

اپنے سفر پر روانہ ہونے سے پہلے سنیتا ولیمز نے کہا ’مجھے پوری امید ہے کہ یہ سفر بغیر کسی پریشانی کے پورا ہوگا۔ میری ٹیم بہت اچھی ہے۔ ہم لوگ ایک ساتھ مل کر کام کرتے ہیں اس لیے اس سفر میں سب کچھ بغیر کسی پریشانی کے ہوجانا چاہیے۔‘

امریکی خلائی ادارے ناسا کا کہنا ہے کہ سنیتا ولیمز اور ان کے ساتھیوں کا خلائی سفر بے حد مصروف ہوگا۔

ناسا کے مطابق سنیتا ولیمز اور ان کی ٹیم نومبر میں واپس زمین پر لوٹے گی۔

اسی بارے میں