’مرض بڑھتا گیا جوں جوں دوا کی‘

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 21 ستمبر 2012 ,‭ 16:52 GMT 21:52 PST

دردکش ادویات کے زیادہ استعمال سے سردرد الٹا بڑھ جاتا ہے۔

دماغی امراض کے ماہرین (نیورولوجسٹ) کئی برسں سے ادویات کے ضرورت سے زیادہ استعمال کی وجہ سے ہونے والے سردرد کے بارے میں جانتے ہیں۔ لیکن صحت پر نظر رکھنے والی تنظیم این آئی سی ای کے مطابق بہت کم مریض اور ڈاکٹر اس کے بارے میں جانتے ہیں۔

این آئی سی ای نے برطانیہ اور ویلز کے صحت کے اہل کاروں کو نئی ہدایات جاری کی ہیں، جو تمام دنیا کے ڈاکٹروں پر لاگو ہو سکتی ہیں۔ امید ہے کہ اس کی وجہ سے وہ ایک ایسے مسئلے کے بارے میں آگاہی پھیل سکتی ہے جس کا بہت بڑی تعداد میں لوگ شکار ہیں۔

کتنے لوگ اس سے متاثر ہیں؟ اس کے بارے میں ٹھیک ٹھیک معلوم نہیں ہے۔ اس مسئلے کی وسعت کے بارے میں بہت کم تحقیق کی گئی ہے۔ ایک جرمن رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ چار فیصد کے قریب لوگ اس میں مبتلا ہو سکتے ہیں۔ این آئی سی ای کی ہدایات جاری کرنے والے ماہرین کے مطابق ان کی تعداد دو فیصد کے قریب ہے۔

یہ تو سب جانتے ہیں کہ کسی بھی دوا کی ضرورت سے زیادہ مقدار نقصان دہ ہو سکتی ہے۔ لیکن دماغی امراض کے ماہروں کو یہ معلوم نہیں ہے کہ دردکش ادویات کے زیادہ استعمال سے سردرد الٹا بڑھ کیوں جاتا ہے۔ شاید ان سے جسم کے درد کا مقابلہ کرنے کا نظام کے توازن میں خلل پڑ جاتا ہے۔

"چھ ہفتے تک مکمل پرہیز کے بعد میں نے دوبارہ دوائیں لینا شروع کی ہیں اور میں نے دیکھا کہ اب یہ واقعی کام کر رہی ہیں۔ اس کا مطلب ہے کہ مائیگرین اب میری زندگی پر حاوی نہیں ہے۔"

اس کا علاج خاصا سخت ہے: یعنی کم از کم ایک مہینے تک تمام دردکش ادویات مکمل طور پر بند کر دی جائیں۔

مریضہ فران سوین کو اس علاج سے گزرنا پڑا۔ انھیں کئی برسوں سے میگرین سردرد کا عارضہ لاحق تھا۔ انھیں احساس نہیں تھا کہ وہ ضرورت سے زیادہ دردکش ادویات لے رہی ہیں جو بیماری کو بدتر بنا رہی ہیں۔

’چھ ہفتے تک مکمل پرہیز کے بعد میں نے دوبارہ دوائیں لینا شروع کی ہیں اور میں نے دیکھا کہ اب یہ واقعی کام کر رہی ہیں۔ اس کا مطلب ہے کہ میگرین اب میری زندگی پر حاوی نہیں ہے۔‘

لیکن کتنی ادویات ضرورت سے زیادہ ہیں؟ ڈاکٹروں سے کہا گیا ہے کہ وہ ان مریضوں پر نظر رکھیں جن کی علامات دوا کے تین ماہ استعمال کے بعد بدتر ہو گئی ہوں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔