کینسر: اموات میں ’ڈرامائی کمی ہو گی‘

آخری وقت اشاعت:  بدھ 26 ستمبر 2012 ,‭ 03:42 GMT 08:42 PST

تخمینے کے مطابق سب سے زیادہ کمی اوویرین کینسر سے ہونے والی اموات میں آئے گی۔

برطانیہ کے ادارے کینسر ریسرچ یوکے نے کہا ہے کہ سنہ دو ہزار تیس تک کینسر سے ہونے والی اموات میں ’ڈرامائی کمی‘ آئے گی۔

انھوں نے کہا کہ تمباکو نوشی میں کمی اور تشخیص و علاج میں بہتری کی وجہ سے شرحِ اموات میں سترہ فیصد کمی آئے گی۔

سنہ دو ہزار دس میں برطانیہ میں ہر ایک لاکھ اموات میں سے تقریباً ایک سو ستر اموات کینسر کے باعث ہوئیں۔ توقع ہے کہ یہ شرح کم ہو کر ایک سو بیالیس فی لاکھ رہ جائے گی۔

اس وقت سب سے مہلک کینسروں میں پھیپھڑوں، چھاتی، بڑی آنت، اور پراسٹیٹ کینسر شامل ہیں۔

تخمینے کے مطابق سب سے بڑی کمی اوویرین کینسر میں آئے گی، جس میں شرحِ اموت تینتالیس فیصد گر جائے گی۔

لندن کی کوئین میری یونیورسٹی کے پروفیسر پیٹر سیسینی کا کہنا ہے ’ہمارے تازہ ترین تخمینے سے ظاہر ہوتا ہے کہ عمر کا فرق نکال کر، آنے والے عشروں میں کئی اقسام کے کینسروں سے ہونے والی اموات میں ڈرامائی تبدیلی آئے گی۔‘

"ہمارے تازہ ترین تخمینے سے ظاہر ہوتا ہے کہ آنے والے عشروں میں کئی اقسام کے کینسروں سے ہونے والی اموات میں ڈرامائی تبدیلی آئے گی۔"

پروفیسر پیٹر سیسینی

جیسے جیسے لوگوں کی عمر میں اضافہ ہو رہا ہے ان لوگوں کی تعداد میں بھی اضافہ ہو رہا ہے جنھیں کینسر کا مرض لاحق ہو گا اور جو ان کی موت کا سبب بنے گا۔ لیکن یہ ہلاکتیں تمام اموات کا مختصر حصہ ہے۔ اس لیے مجموعی شرحِ اموات میں کمی واقع ہو گی۔

تاہم اگلے دو عشروں کے دوران جگر اور منہ کے کینسر سے ہونے والی اموات میں اضافہ ہو گا۔

کینسر ریسرچ یوکے کے چیف ایکزیکٹیو ڈاکٹر ہرپال کمار نے کہا ’یہ نئے اعداد و شمار حوصلہ افزا ہیں اور ان سے اس پیش رفت کی نشان دہی ہوتی ہے جو ہم دکھا رہے ہیں۔‘

برطانیہ کے ادارۂ صحت کا کہنا ہے ’یہ اعداد و شمار کینسر کے علاج میں بہتری کے عکاس ہیں لیکن ہم جانتے ہیں کہ ابھی بہت کچھ کرنا باقی ہے۔‘

ادارے نے مزید کہا ’ہمارا مقصد دو ہزار پندرہ تک ہر سال پانچ ہزار سے زیادہ زندگیاں بچانا ہے، اورہمارے اور یورپ کے کینسر کے خلاف بہترین کارکردگی دکھانے والے ممالک کے درمیان فرق کو آدھا کرنا ہے۔‘

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔