فیس بک اکاؤنٹس تک بغیر پاس ورڈ رسائی

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 3 نومبر 2012 ,‭ 16:41 GMT 21:41 PST

سماجی رابطے کی ویب سائٹ فیس بک نے اس خامی پر فوراً قابو پا لیا ہے جس کہ تحت کئی اکاؤنٹس تک بغیر ’پاس ورڈ‘ دیے رسائی حاصل کر لی گئی۔

اس وائرس کے بارے میں ہیکر نیوز نامی ویب سائٹ پر شائع پیغام میں بتایا گیا۔

اس پیغام میں گوگل کا ایک لنک دیا گیا تھا جس میں لاکھوں اکاؤنٹس کے لنکس موجود تھے۔

ان میں سے بعض اکاؤنٹس کے لنکس پر کلک کرنے سے بنا پاس ورڈ دیے اس اکاؤنٹ تک رسائی ممکن تھی۔ ان لنکس میں فیس بک کے صارفین کے ای میل پتے بھی موجود تھے۔

اس پیغام میں فیس بک کا وہ نظام ظاہر کر دیا گیا تھا جس کے ذریعے فیس بک اپنے صارفین کو فوری طور پر ان کے اکاؤنٹ تک رسائی دیتا ہے۔

یہ وہی لنک ہے جو اکثر فیس بک میں سٹیٹس اپ ڈیٹس اور نوٹیفیکیشن سے متعلق آنے والے ای میلز میں موجود ہوتا ہے جو صارفین کو ان کے اکاؤنٹ تک فوری رسائی دیتا ہے۔

فیس بک کے سکیورٹی انجینیئر میٹ جانز کا کہنا ہے کہ یہ لنکس صرف اکاؤنٹ ہولڈرز کے ای میلز میں بھیجے جاتے ہیں اور انہیں صرف ایک بار ہی کلک کیا جا سکتا ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ظاہر کیے جانے والے لنکس میں سے لاکھوں لنکس ایکسپائر ہو چکے تھے۔

تاہم انہوں نے کہا کہ ’چونکہ بعض لنکس ظاہر ہو چکے ہیں اس لیے جز وقتی طور پر اس سہولت کو بند کیا جا رہا ہے تاکہ ان صارفین کی سکیورٹی کو بہتر بنایا جا سکے‘۔ ظاہر ہونے والے اکاؤنٹس میں سے زیادہ تر چین اور روس کے صارفین کے ہیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔