چینی حکومت، ہیکروں کی پشت پناہی؟

آخری وقت اشاعت:  پير 5 نومبر 2012 ,‭ 14:53 GMT 19:53 PST

چین ہیکروں پر الزام لگایا گیا ہے کہ انھوں نے ایک ماہ تک کوکا کولا کے خفیہ نیٹ ورکس تک رسائی رکھی۔ یہ خبر معاشی خبروں کی ویب سائٹ بلوم برگ نے دی ہے۔

سوڈا مشروبات بنانے والی کمپنی کوکا کولا پر دو ہزار نو میں کمپنی کے ایک اعلٰی عہدے دار کو ایک وائرس زدہ ای میل بھیج کر حملہ کیا گیا تھا۔

کوکا کولا کا خیال ہے کہ ہیکروں کو چینی حکومت کی حمایت حاصل تھی۔

ہیکرایک مہینے تک خفیہ طریقے سے سسٹم کے اندر موجود رہے اور حساس تجارتی معلومات حاصل کرتے رہے۔

امریکہ کی سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن (ایس ای سی) نے کہا ہے کہ کوکا کولا نے عوامی طور پر اس حملے کے بارے میں کچھ نہیں بتایا تھا۔

ایس ای سی نے گذشتہ سال ان کمپنیوں کے لیے ضابطۂ کار وضع کیا تھا جنھیں سائبر حملوں کا نشانہ بنایا گیا ہو۔ ادارے کا کہنا ہے کہ اس معاملے میں شفافیت سرمایہ کاروں کے مفاد میں ہے۔

تاہم بدنامی اور حصص کی قیمت گرنے کے ڈر سے کمپنیاں اب تک ایسا کرنے سے ہچکچاتی رہی ہیں۔

جیکب اولکوٹ امریکی کانگریس کے سابق مشیر ہیں۔ انھوں نے کہا ہے کہ ’سرمایہ کاروں کو کوئی اندازہ نہیں کہ آج کیا ہو رہا ہے۔ کمپنیاں اپنے نیٹ ورکس کے اندر ہونے والے معاملات کے بارے میں بہت کم معلومات دیتی ہیں‘۔

کوکا کولا کے معاملے میں ہیکروں نے اپنے آپ کو کمپنی کے چیف ایگزیکیٹیو کے طور پر پیش کرتے ہوئے کوکا کولا کے نائب صدر برائے بحرالکاہل پال ایچیلز کو ایک ای میل بھیجی۔

ای میل کے اندر ایک خطرناک وائرس کا لنک تھا جس پر کلک کیا گیا اور اس کے ذریعے ہیکروں کو موقع مل گیا کہ وہ ایچیلز کے کمپیوٹر پر کی بورڈ پڑھنے والے اور دوسرے مضر پروگرام انسٹال کر دیں۔

اس کے بعد آنے والے دنوں میں ہیکروں نے ای میلیں اور پاس ورڈ اکٹھے کیے اور اپنے آپ کو نیٹ ورکس پر ایڈمنسٹریٹر کی مراعات دی دیں۔

بلوم برگ نے کمپنی کی جو اندرونی دستاویزات دیکھی ہیں ان کے مطابق ہیکروں کو چینی حکومت کی پشت پناہی حاصل تھی۔

یہ ہیکنگ اس وقت عمل میں آئی ہے جب کوکا کولا چائنا ہوئیوان جوس گروپ کو دو ارب چالیس کروڑ ڈالر میں خریدنے کا ارادہ رکھتی ہے۔

بلوم برگ نے اندرونی ذرائع کے حوالے سے کہا ہے کہ یہ سودا سائبر حملے کے تین دن کے اندر اندر ٹوٹ گیا۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔