اکٹھے بیٹھ کر کھانا مفید ہے: تحقیق

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 22 دسمبر 2012 ,‭ 23:01 GMT 04:01 PST

ماہرین کہتے ہیں کہ والدین اور بھائی بہنوں کو دیکھنے سے بچے اچھی عادات سیکھتے ہیں

برطانیہ میں محققین کا کہنا ہے کہ خاندان کے ساتھ کھانا کھانے سے بچوں کی کھانے پینے کی عادات بہتر ہوتی ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ بچوں کی خوراک میں روزانہ پھل اور سبزیوں کے پانچ حصے ہونے چاہیے یا انہیں ہر روز تقریباً 400 گرام پھل سبزی کھانی چاہیے۔

تحقیق کے مطابق جو بچے ہمیشہ اپنے خاندان کے ساتھ کھانا کھاتے ہیں وہ ضرورت کے مطابق پھل سبزی کھاتے ہیں۔ جو خاندان کبھی کبھی ہی ساتھ کھانا کھاتے ہیں وہاں بھی بچوں کی خوراک میں پھل سبزیوں کی مقدار طے شدہ مقدار کے قریب ہوتی ہے۔

ماہرین کہتے ہیں کہ والدین اور بھائی بہنوں کو دیکھنے سے بچے اچھی عادات سیکھتے ہیں۔

اس تحقیق میں جنوبی لندن کے 52 پرائمری سکولوں کے تقریباً 2400 طلبا کے کھانے پینے کی عادات کا مطالعہ کیا گیا۔

والدین اور کارکنان نے سکول اور گھروں کی کھانے کی ڈائريوں سے یہ معلومات اکٹھی کیں کہ بچے دن بھر میں کیا کھاتے پیتے ہیں۔

ساتھ ہی والدین کا پھل سبزیوں کے حوالے سے رویے کے بارے میں بھی سوال پوچھے گئے جیسے ’اوسطاً ایک ہفتے میں آپ کا خاندان ایک ساتھ کتنی بار کھانا کھاتا ہے؟‘ اور ’کیا آپ اپنے بچے کو کھانے کے لیے پھل سبزی دیتے ہیں؟‘

تحقیق سے پتہ چلا کہ 656 خاندان ’ہمیشہ‘ اکٹھے بیٹھ کر کھانا کھاتے تھے، 768 خاندان ’کبھی کبھی‘ ایسا کرتے تھے جبکہ 92 خاندان کبھی بھی ایک ساتھ بیٹھ کر کھانا نہیں کھاتے تھے۔

اس سے یہ پتہ چلا ہے کہ کبھی بھی ایک ساتھ کھانا نہ کھانے والے خاندانوں کے بچوں کے مقابلے میں ہمیشہ ساتھ کھانا کھانے والے بچے 125 گرام سے زیادہ اور کبھی کبھی ساتھ کھانا کھانے والے بچے 95 گرام زیادہ پھل سبزی کھاتے ہیں۔

یہ تحقیق میگھا كرسٹين کی پی ایچ ڈی کا حصہ تھی۔ میگھا کے مطابق ’جدید طرز زندگی اس طرح کی ہے کہ اکثر پورا خاندان ایک ساتھ بیٹھ کر کھانا نہیں کھا سکتا۔ لیکن یہ تحقیق ظاہر کرتی ہے کہ صرف اتوار کو بھی اگر خاندان ایک ساتھ کھانا کھائیں تو اس سے ہمارے خاندان پر مثبت اثرات مرتب ہوتے ہیں۔‘

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔