فضائی تجربے میں مسافروں کی جگہ آلو

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 22 دسمبر 2012 ,‭ 08:34 GMT 13:34 PST
آلو

امریکی جہاز بنانے والی کمپنی بوئنگ نے دورانِ پرواز طیارے میں وائی فائی نظام کی سہولت فراہم کرنے کی خاطر مسافروں کے متبادل کے طور پر بالکل ہی مختلف چیز یعنی آلو کا استعمال کیا ہے۔

انٹرنیٹ کے سگنل کی موجودگی کی جانچ کے لیے طیارے کی سیٹوں پر انسان کے بجائے آلو کی بڑی بڑی بوریاں رکھی گئیں تاکہ سنگل کی قوت کا اندازہ لگایا جاسکے۔

کمپنی کے تحقیق کرنے والوں کا کہنا ہے کہ آلو الیکٹرانک سگنل سے اسی طرح ہم آہنگ ہوتا ہے جیسے کہ انسان۔

اس تکنیک کا اس لیے بھی استعمال کیا گیا ہے کیونکہ انسانوں کے برعکس یہ آلو کی بوریاں کبھی بور نہیں ہوتیں۔

بوئنگ کے انجینئیروں نے دوران پرواز طرح طرح کی جانچ کی تاکہ اس بات کی یقین دہانی کی جا سکے کہ مسافروں کو دوران پرواز بہترین وائی فائی سگنل مل سکے اور جہاز کی دوسری الیکٹریکل رکاوٹوں سے اسے تحفظ فراہم ہو سکے۔

اس جانچ کے دوران یہ پایا گیا ہے کہ طیارے کے بند حصوں اور کیبن میں سگنل کمزور تھے۔

بوئنگ کے انجینئیر ڈینس لیوس نے کہا ’آپ چاہیں گے کہ آپ کا لیپ ٹاپ کہیں بھی درست ڈھنگ سے کام کرے لیکن یہ اس بات پر منحصر ہے کہ آپ کی سیٹ کہاں ہے کیونکہ سیٹ کے حساب سے ہی اسے مضبوط اور کمزور سگنل مل رہے ہوں گے۔‘

آلو

طیارے میں سیٹوں پر نوہزار کلو آلو بوریوں میں بھر کر رکھے گئے تھے۔

سگنل کی مسلسل اور مساوی فراہمی کی جانچ کے لیے طیارے پر نو ہزار کلو آلو رکھے گئے تھے۔

برطانیہ کی آلو پیدا کرنے والے کسانوں کی تنظیم ’پوٹیٹو کونسل‘ کا کہنا ہے کہ بہت سے لوگ آلو کے انسانی متبادل ہونے کو زیادہ اہمیت نہیں دیتے۔

کونسل کے ترجمان نے کہا کہ ’مثال کے طور پر آلو کا استعمال کاغذ اور روشنائی بنانے سے لے کر کپڑوں کے ریشوں کو مضبوطی فراہم کرنے کے لیے سٹارچ کے طور پر ہوتا ہے تاکہ وہ بنائی کے دوران نہ ٹوٹیں، آلو کے سٹارچ (نشاستے) سے گلوکوز بھی حاصل کیا جا سکتا ہے۔‘

انھوں نے مزید کہا ’حسن کی مصنوعات سے لے کر سوجن کے لیے بھی آلو کا استعمال ہوتا ہے اور اس میں آرام پہنچانے کی صلاحیت ہے جبکہ یہ قبض کشا بھی ہے۔ کچے آلو آنکھوں کو آرام دیتے ہیں، آلو کا استعمال الکوحل کے طور پر بھی ہو سکتا ہے اور اس سے بجلی بھی پیدا کی جاسکتی ہے۔‘

یورپ میں آلو کے تاجروں کی نمائندہ تنظیم ’یوروپٹاٹ‘ کا کہنا ہے کہ ان کی تنظیم ’آلو کے دوسرے تجربوں کی جانب بھی دیکھ رہی ہے تاکہ ہماری زندگی مزید آسان ہو سکے۔‘

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔