سال 2012: موبائل فون کی عالمی فروخت میں کمی

آخری وقت اشاعت:  بدھ 13 فروری 2013 ,‭ 13:56 GMT 18:56 PST
موبائل فون

موبائل فون کی فروخت میں کمی کی سب سے بڑی وجہ مشکل معاشی حالات بتائے جاتے ہیں

سنہ 2012 میں موبائل فون کی عالمی فروخت میں گذشتہ سال کے مقابلے پر کمی واقع ہوئی ہے۔ یہ بات تحقیقاتی کمپنی گارٹنر کی ایک رپورٹ میں بتائی گئی ہے۔

رپورٹ کے مطابق سال بھر میں ایک ارب پچھتر کروڑ فون خریدے گئے جو گذشتہ سال کے مقابلے پر 1.7 فیصد کم ہیں۔

کمپنی کے تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ ’مشکل معاشی حالات‘ اس کمی کی ایک وجہ ہیں۔

اس سے قبل سپین کے سرکاری اعداد و شمار کے مطابق گذشتہ سال موبائل فونز اور فون کارڈوں کی فروخت میں پانچ فیصد کی کمی دیکھنے میں آئی۔

2012 میں سپین کی قومی پیداوار میں بھی 1.3 فیصد کی کمی آئی تھی۔

گارٹنر کے اعداد و شمار سے پتا چلتا ہے کہ مجموعی فون مارکیٹ میں کمی کی وجہ سستے فونز کی مانگ میں کمی تھی۔ کمپنی کے مطابق سال کی آخری سہ ماہی میں ایسے 26 کروڑ 44 لاکھ فون فروخت ہوئے۔ یہ تعداد گذشتہ برس کے مقابلے پر تقریباً 19 فی صد کم ہے۔

جائزے میں پایا گیا ہے کہ رواں برس کے مقابلے اس برس چوتھی سہ ماہ میں سمارٹ فونز کی فروخت میں 38.3 فی صد اضافہ ہوا ہے، تاہم یہ تعداد عام فونز کے مقابلے پر اب بھی کم ہے۔ اس برس 20 کروڑ 77 لاکھ سمارٹ فون فروخت ہوئے ہیں۔

ادارے کا کہنا ہے کہ سمارٹ فون کے بازار میں سیم سنگ اور اپیل کے فون سب سے زیادہ فروخت ہوئے ہیں۔

کمپنی کے تجزیہ کار انشل گپتا کا کہنا ہے کہ سمارٹ فون کے بازار کوئی بھی ایسی کمپنی نہیں ’جو ان دونوں کمپنیوں کے بعد تیسرے مقام پر ہو۔‘

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔