یاہو ایک ارب ڈالر میں ٹمبلر کو خريدےگا

یاہو کے انتظامی بورڈ نے نیویارک میں قائم بلاگنگ کی خدمات دینے والی کمپنی ٹمبلر کو 1.1 بلین امریکی ڈالر میں خریدنے کی منظوری دے دی ہے۔

امریکی میڈیا کے مطابق اس کاروباری سمجھوتے کا اعلان پیر کو متوقع ہے۔

تکنیکی بلاگ آل تینگز ڈی نے اس معاملے سے باخبر ذرائع کے حوالے سے کہا ہے کہ یہ ڈیل ناگزیر تھا۔

اگر یہ سودا کامیاب ہوتا ہے تو یہ ماریسا میئر کی بحیثیت سی ای او سب سے بڑا کاروباری ڈیل ہوگا۔

ماریسا میئر کو جولائی 2012 میں گوگل سے یاہو میں بہتری لانے کے لیے لایا گیا تھا۔انہوں نے موبائل فونز اور سماجی رابطوں کی خدمات کے شعبے کو ترقی دینے پر توجہ مرکوز کی ہے۔

تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ ٹمبلر کو لینے سے یاہو کی سوشل میڈیا پر موجودگی بڑھ جائے گی اور اسے نوجوان صارفین کو متوجہ کرنے میں آسانی ہوگی۔اس ڈیل سے ٹمبلر کو اشتہارات سے منافع کمانے میں بھی مدد ملے گی۔

ٹمبلر نے اپنے ہوم پیج پر لکھا ہے کہ وہ 108 ملین بلاگز کو ہوسٹ کرتا ہے جس پر 50.7 بلین پوسٹس ہیں۔

وال سٹریٹ جرنل نے نامعلوم ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ اس سمجھوتے کے تحت ٹمبلر ایک آذاد کمپنی کی حیثیت سے کام کرے گی۔

ماہانہ تقریباً 700 ملین صارفین یاہو کو دیکھتے ہیں جو انٹرنیٹ کی پوری صنعت میں سب سے زیادہ ہے۔ تاہم یاہو نے 2012 میں 1000 سے زیادہ نوکریاں ختم کیں اور ابھی تک ان کے ہاں یہ بحث چل رہا ہے کہ آیا ہاہو کو میڈیا کنٹنٹ پر توجہ دینا چاہیے یا میڈیا ٹولز اور ٹیکنالوجی پر۔

اسی بارے میں