اے ٹی ایم مشینوں میں جدت لانے کی ضرورت

Image caption نئی کیش مشین میں ٹیبلٹ کمپیوٹر کی ہی ٹیکنالوجی استعمال کی گئی ہے

اے ٹی ایم مشینیں دنیا بھر کے بینکاری نظام کا ایک اہم حصہ ہیں اور روزانہ کروڑوں افراد ان مشینوں کی مدد سے رقوم نکالتے ہیں۔

تاہم ماہرین کا کہنا ہے کہ ادائیگی کا طریقہ ڈیجیٹل ہوتا جا رہا ہے اس لیے اب اے ٹی ایم مشینوں میں بھی جدت لانے کی ضرورت ہے۔

اے ٹی ایم کو اہم چیلنج سمارٹ فونز سے ہے کیونکہ موبائل بینکنگ صارفین کو اکاؤنٹ کی پڑتال، بلوں کی ادائیگی اور ریستوران میں تیزی سے ادائیگی جیسی سہولیات فراہم کرتی ہے۔

ایسے میں اب سمارٹ فون جیسی اے ٹی ایم بنانے کا ذکر ہو رہا ہے۔ حال ہی میں لندن میں ایک اے ٹی ایم فیسٹیول کا انعقاد کیا گیا۔ اس میں سمارٹ فون یا ٹیبلٹ سے بڑی لیکن ان جیسی ہی نظر آنے والی اے ٹی ایم کے پروٹوٹائپ کی نمائش کی گئی۔

سکیورٹی اور سافٹ ویئر کمپنی ڈابولڈ نے ایک نئی کیش مشین بنائی ہے جس میں ٹیبلٹ کمپیوٹر کی ہی ٹیکنالوجی استعمال کی گئی ہے۔

یہ سائز میں ایک عام اے ٹی ایم کی صرف دو تہائی ہے۔ اس میں ٹچ سکرین کی پیڈ نصب ہے اور اسے براڈ بینڈ کنکشن پر چلایا جا سکتا ہے۔ اس کا مطلب یہ ہوا کہ اس کا استعمال زیادہ سے زیادہ جگہوں اور صارفین کی سہولت کے مطابق ممکن ہے۔

اس میں لگے کیمرے سے اس کا استعمال کرنے والا یہ دیکھ سکتا ہے کہ اس کے پیچھے کیا ہو رہا ہے. اس ویڈیو کے ذریعہ دھوكے بازوں کو پکڑا جا سکتا ہے۔

معذور افراد کو شکایت رہی ہے کہ اے ٹی ایم تک ان کی رسائی مشکل ہوتی ہے تاہم اس کیش مشین میں ایسی سہولت ہے کہ اسے ویل چیئر تک جھکایا بھی جا سکتا ہے.

یہ مشین صارفین کو پیشگی نقد رقم نکالنے کی سہولت تو دے گی ہی ساتھ میں ماں باپ کو یہ سہولت بھی فراہم کرے گی کہ ان کا بچہ کسی ہنگامی حالت میں ایک کوڈ کے ذریعہ پیسہ نکال سکے۔

ڈابولڈ کے براہم كے ساچي کہتے ہیں کہ مشین ابھی ابتدائی دور میں ہے لیکن ایک سے ڈیڑھ سال میں وہ بینکوں کی شاخوں یا دکانوں کے لیے تیار ہو جائے گی۔

ماہرین کے مطابق تیز رفتار انٹرنیٹ کے اس دور میں یہ ٹھیک بات نہیں کہ کوئی مشین لوگوں سے یہ کہے کہ جب تک آپ کے پیسے شمار کیے جا رہے ہیں اس وقت تک براہ مہربانی تھوڑا انتظار کریں۔

نقدی دینے والی مشین کی نئی نسل موبائل فون کی طرح پتلی اور سمارٹ ہے۔ اس میں کارڈ ڈالنے پر صارفین کا ذاتی پروفائل دکھائی دیتا ہے جس میں انہیں پسندیدہ لین دین، مقامی خدمات اور اکاؤنٹ کے انتخاب کا اختیار ملتا ہے۔

جیسے کہ اگر کوئی شخص اکثر مشین سے پانچ سو روپے نکالتا ہے تو یہ چیز خصوصیت سے سکرین پر دکھائی جائے گی۔

نئے دور کی ان ڈیجیٹل اے ٹی ایم مشینوں کا سامنے آنا اس بات کا اشارہ ہے کہ چھوٹی سکرین اور میلے کی بورڈ والی مشینوں کا دور ختم ہونے والا ہے۔

اسی بارے میں