بھارت: تمباکو سےسالانہ 15 لاکھ اموات کا خطرہ

Image caption بھارت میں بغیر دھوئیں والے تمباکو کے استعمال میں پان مسالہ، گٹکھا اور کھینی شامل ہیں

صحت کے عالمی ادارے ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن (ڈبلیو ایچ او) کے مطابق بھارت اور جنوب مشرقی ایشیا کے دس ممالک میں 25 کروڑ افراد بغیر دھوئیں والے تمباکو کا استعمال کرتے ہیں۔

حالیہ جاری رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اگر تمباکو کے استعمال کی اس عادت کو ترک نہیں کرایا گیا تو سنہ 2020 تک تمباکو سے مرنے والوں کی تعداد بھارت میں 15 لاکھ سالانہ تک پہنچ سکتی ہے۔

تمباکو کی روک تھام کے عالمی منصوبے یعنی انٹرنیشنل ٹوبیکو کنٹرول پروجکٹ (آئی ٹی سی پی) کی رپورٹ کے مطابق 25 کروڑ کی تعداد ان 25 کروڑ کے علاوہ ہے جو دھوئیں والے تمباکو استعمال کرتے ہیں۔

رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ بغیر دھوئیں والے تمباکو کا 90 فی صد استعمال بھارت اور جنوب مشرقی ایشیا کے دس ممالک میں ہوتا ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ تمباکو پر کنٹرول کے عالمی معاہدے کا حصہ ہونے اور مختلف قسم کے تمباکو مخالف اور دھوئیں سے پاک قوانین کے باوجود بھارت اس کے مؤثر نفاذ میں ناکام رہا ہے اور تمباکو کے استعمال کی عادت کی وجہ سے بھارتی شہریوں کو بیماریوں کا زیادہ خطرہ لاحق ہے۔

خبررساں ادارے روئٹرز کے مطابق کینیڈا کی واٹرلو یونیورسٹی میں نفسیات کے پروفیسر اور اس رپورٹ کے مصنفین میں سے ایک جیفری فونگ کا کہنا ہے کہ ’دوسرے ممالک کے مقابلے بھارت تمباکو کی روک تھام کے قانون کے سلسلے میں سنہ 2003 سے ہی کافی سرگرم رہا ہے لیکن ایسا لگتا ہے کہ ان کے حالیہ قوانین لوگوں کو تمباکو سے پرہیز اور اس کی عادت ترک کرنے پر راضی کرانے میں خاطرخواہ نتائج حاصل کرنے میں ناکام رہے ہیں۔‘

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ایک ارب 20 کروڑ کی آبادی والے بھارت میں 27 کروڑ سے زائد افراد تمباکو کا استعمال کرتے ہیں۔

رپورٹ میں کہا گيا ہے کہ ’بھارت میں ہر چار میں سے ایک شخص تمباکو کا استعمال کر رہا ہے۔ اور بھارت میں کینسر سے مرنے والے تمام مردوں میں سے نصف تمباکو کی وجہ سے موت کا شکار ہوتے ہیں جب کہ خواتین میں یہ شرح ایک چوتھائی ہے۔‘

آئی ٹی سی پی انڈیا سروے کے تحت بھارت کی چار ریاست بہار، مدھیہ پردیش، مہاراشٹر اور مغربی بنگال میں تمباکو کا استعمال کرنے والے آٹھ ہزار افراد اور تمباکو کا استعمال نہ کرنے والے 2400 افراد کا سروے کیا گیا۔

بھارت میں بغیر دھوئیں والے تمباکو میں گٹکا، زردہ، پان مسالہ اور کھینی شامل ہے جسے زیادہ تر غریب لوگ سگریٹ اور بیڑی کے بدلے استعمال کرتے ہیں۔

اسی بارے میں