موڈ معلوم کرنے کے لیے سمارٹ بریزیئر

Image caption محققین اپنی تحقیق میں کہتے ہیں کہ ’اس بریزیئر کا استعمال مثالی ہے کیونکہ یہ ہمیں دل کے قریب کی جگہ کی طبی معلومات دیتا ہے

مائیکرو سافٹ کے محققین نے ایک ایسا سمارٹ بریزیئر یعنی زیر جامہ ڈیزائن کیا ہے جو ذہنی دباؤ کا پتا لگا سکتا ہے۔

اس بریزیئر یا برا کے نمونے میں ایسے سینسرز لگائے گئے ہیں جو دل اور جلد کی حرکت کی نگرانی کرتے ہیں جس سے برا پہننے والی خاتون کے موڈ کا پتا چل جاتا ہے۔ ان سینسرز کو برا سے ہٹایا بھی جا سکتا ہے۔

اس بریزیئر کو تیار کرنے کا مقصد یہ معلوم کرنا تھا کہ خاتون کو اس ٹیکنالوجی کے ذریعے ذہنی دباؤ کے دوران زیادہ خوراک کھانے سے روکنے میں مدد مل سکتی ہے یا نہیں۔

سمارٹ فون ایپ کے ذریعے یہ بریزیئر پہننے والی کو موڈ ڈیٹا دیا جاتا ہے جو ان کو ’ذہنی دباؤ کی کیفیت کے دوران‘ ممکنہ طور پر زیادہ خوراک کھانے کے بارے میں خبر دار کرتا ہے۔

محققین اپنی تحقیق میں کہتے ہیں کہ ’اس بریزیئر کا استعمال مثالی ہے کیونکہ یہ ہمیں دل کے قریب کی جگہ کی طبی معلومات دیتا ہے۔‘

مردوں کے لیے اس قسم کا انڈرویئر زیادہ کارآمد ثابت نہیں ہوا کیونکہ اس انڈر ویئر میں لگے سینسرز دل سے بہت دور تھے۔

جن خواتین نے سینسرز والی بریزیئر کو استعمال کیا، انھوں نے چار دن کے لیے چھ گھنٹے روزانہ اپنی جذباتی کیفیت کے بارے میں رپورٹ دی۔

مائیکرو سافٹ کے سینیئر محقق ڈیزائنر آسٹا روز وے نے کہا کہ ’تجربے میں شامل خواتین کے لیے اس بریزیئر کو پہننا تکلیف دہ تھا کیونکہ سینسرز کو ہر تین سے چار گھنٹے بعد چارج کرنا پڑتا تھا۔‘

گذشتہ مہینے بریزیئر کو متعارف کرایا گیا تھا جو ٹوئٹر سے منسلک تھا۔ جب بریزیئر کا ہُک کھل جاتا تھا تو یہ ایک ٹویٹ بھیج دیتا تھا۔

گذشتہ سال ایک امریکی کمپنی کو ایک ایسا آلہ بنانے پر کام کرنے کا پیٹنٹ ملا تھا جو کینسر معلوم کرنے کے لیے چھاتی کے درجۂ حرارت کا تجزیہ کرے گا۔

بھارت میں ریپ کے بڑھتے ہوئے واقعات کے پیشِ نظر انجینیئرنگ کے تین طلبہ نے ایک بریزیئر تیار کیا جس میں ایسے الیکٹرانک سرکٹ لگے ہوئے تھے کہ جب کوئی اس بریزیئر میں ملبوس خاتون کو چھاتی پر ہاتھ لگائے تو یہ سرکٹ حرکت میں آ جائیں۔

اسی بارے میں