کینسر کا علاج ہائی ٹیک چشمے کی مدد سے

Image caption کینسر کے علاج کے گوگلز

سائنسدان ہمیشہ سے کینسر کے علاج کی تلاش میں رہے ہیں اور اس سلسلے میں اب ہائی ٹیک گاگلز یا چشمے ایک نئے علاج کی صورت میں سامنے آئے ہیں۔

اس وقت کینسر کا علاج کرنے والے ڈاکٹر علاج کے دو بنیادی طریقے استعمال کرتے ہیں: ایک جس میں کینسر کو دواؤں کے ذریعے ختم کیا جاتا ہے اوردوسرے طریقے میں ریڈیو تھیراپی کے ذریعے کینسر کی رسول کو نکال دیا جاتا ہے۔

دوسرا طریقہ بہت عام ہے مگر اس میں کامیابی کی شرح کم ہوتی ہے کیونکہ یہ جاننا مشکل ہوتا ہے کہ صحت مند ٹِشو کہاں سے شروع ہو رہا ہے اور کینسر کی رسولی کہاں ختم ہو رہی ہے۔ اس کا حل ڈھونڈنے کے لیے سائنس دان اکثر رسولی کے باہر تھوڑے سے صحت مند ٹشو کو بھی کاٹ دیتے ہیں مگر اگر تب بھی کینسر کے کچھ خلیے موجود ہوں تو دوبارہ سرجری کی ضرورت ہوتی ہے۔

مگر امریکہ میں بنے والی نئی گوگل ٹیکنالوجی کی مدد سے سرجن دیکھ سکتے ہیں کہ کون سے خلیے سرطان زدہ ہیں اور کون سے صحت مند۔ اس کی مدد سے متاثرہ حصے کو نکالنا آسان ہو جائے گا۔

ڈاکٹر رائن فیلڈ جو اس علاج کے ابتدائی پروگرام کا حصہ ہیں، کہتے ہیں: ’یہ ٹیکنالوجی بہت زبردست ہے۔ بالکل اسی طرح جیسے ایک خوردبین سرجری میں آپ کی رہنمائی کرتی ہو۔‘

اس علاج کی تحقیق کے دوران مریضوں کو ایک رنگ جسم میں ڈالا جاتا ہے۔ اس رنگ میں ایک خاص قسم کی پروٹین موجود ہوتی ہے جس میں رسولی کے سرطان زدہ خلیوں کے ساتھ چپک جانے کی صلاحیت ہوتی ہے۔ رنگ لگنے کے بعد ہی سرطانی خلیے ایک مخصوص قسم کی روشنی خارج کرتے ہیں جسے انسانی آنکھ تو نہیں دیکھ سکتی مگر انھیں ہائی ٹیک گوگلز کی مدد سے ضرور دیکھا جا سکتا ہے۔

ڈاکٹر اچیلے فو مزید کہتے ہیں کہ گوگلز کے ’سینسر اس روشنی کو سرجن کی نظر کے سامنے لے آتے ہیں۔‘

ابھی اس ٹیکنالوجی کو متعارف ہوئے کچھ ہی دن ہوئے ہیں مگر سائنس دانوں کی رائے میں یہ ایک حوصلہ بخش ابتدا ہے۔

ڈاکٹر رائن فیلڈ کا کہنا ہے کہ اس کی مدد سے ’ آپریشن کے حصے میں کمی آتی ہے اور اگر ہم مزید حصہ کاٹنا چاہیں تو وہ بھی کر سکتے ہیں۔‘

کہا جا رہا ہے کہ امریکہ میں چھاتی کے سرطان کے 40 فیصد مریض اور برطانیہ میں تقریباً 20 فیصد مریضوں کو ایک سے زیادہ سرجری کی ضرورت ہوتی ہے۔

گوگلز کی مدد سے ایک مخصوص سرجری ٹیومر کو نکالنے میں فائدہ مند ثابت ہو سکتی ہے جس سے مریضوں کو مزید آپریشن کی ضرورت نہیں ہو گی۔

فی الحال یہ نئی گوگل ٹیکنالوجی ان مریضوں پر استعمال کی گئی ہے جنھیں جلد یا چھاتی کا کینسر ہے۔

اسی بارے میں