ایکسپلورر میں سنگین خامی کا انکشاف

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption مائیکروسافٹ کا کہنا ہے کہ وہ اس خامی کی چھان بین کر رہے ہیں اور موزوں اقدامات کریں گے

مائیکروسافٹ نے اپنے صارفین کو خبردار کیا ہے کہ ان کے براؤزر انٹرنیٹ ایکسپلورر (آئی ای) میں ایک ایسی خامی ہے جس کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ہیکر صارفین کے کمپیوٹر تک رسائی حاصل کر سکتے ہیں۔

انٹرنیٹ ایکسپلورر میں یہ خامی ورژن 6 سے لے کر 11 تک کے تمام ورژنز میں موجود ہے اور مائیکروسافٹ کا کہنا ہے کہ اس سلسلے میں کیے گئے مخصوص حملوں کے بارے میں اسے معلوم ہے۔

نیٹ مارکٹ شیئر کے مطابق دنیا بھر کے براؤزرز کی مارکیٹ کا تقریباً 50 فیصد آئی ای کے پاس ہے۔

مائیکروسافٹ کا کہنا ہے کہ وہ اس خامی کی چھان بین کر رہے ہیں اور اس سلسلے میں موزوں اقدامات کریں گے۔

اختتامِ ہفتہ پر مائیکروسافٹ نے سیکورٹی اعلامیہ جاری کیا جس میں کہا گیا ہے کہ وہ اپنے ماہانہ سکیورٹی اپ ڈیٹ میں اس کا حل جاری کر دیں گے یا پھر اگر صارفین کو زیادہ مسئلہ ہوا تو علیحدہ سے بھی حل پیش کیا جا سکتا ہے۔

مائیکروسافٹ کا کہنا ہے کہ اس عیب کا فائدہ اٹھانے کی کوشش کرنے والے ہیکر اس مقصد کے لیے بنائی گئی مخصوص ویب سائٹ بنا سکتے ہیں تاہم انھیں صارفین کے کمپیوٹر کا کنٹرول حاصل کرنے کے لیے صارفین کو اس بات پر قائل کرنا ہوگا کہ وہ ان کی ویب سائٹ پر آئیں۔

اس کے لیے انھیں صارفین کو کسی لنک پر کلک کروانا پڑے گا پھر ای میل یا انسٹنٹ میسنجر کی مدد سے صارفین کو شکار بنانا پڑے گا۔ تاہم ہیکر صارفین کو ویب سائٹ پر زبرستی نہیں لا سکتا۔

کامیابی کی صورت میں ہیکر کے پاس وہ تمام حقوق آ جائیں گے جو کہ اس کمپیوٹر پر موجود صارف کے پاس ہوتے ہیں۔ اگر اس وقت کے صارف کے پاس ایڈمنسٹریٹو حقوق ہوں تو ہیکر کے پاس بھی کمپیوٹر کا مکمل کنٹرول آ سکتا ہے۔

تاہم کمپنی کا کہنا ہے کہ ونڈوز سرور 2003، ونڈوز سرور 2008، ونڈوز سرور 2008 R2، ونڈوز سرور 2012 اور ونڈوز سرور 2012 R2 اس خامی سے متاثر نہیں ہوتے۔

اسی بارے میں