ایمازون کی اشیا اب ٹوئٹر پر خریدیں

Image caption ٹوئٹر نے اس سال کی پہلی سہ ماہی میں 13 کروڑ ڈالر سے زیادہ خسارے کا اعلان کیا تھا

انٹرنیٹ پر خرید و فروخت کی معروف کمپنی ایمازون نے سماجی روابط کی ویب سائٹ ٹوئٹر کے ساتھ شراکت کا اعلان کیا ہے جس کے تحت ٹوئٹر کے صارفین کسی ہیش ٹیگ کے استعمال سے ایمازون پر خریداری کر سکیں گے۔

صارفین امریکہ میں amazoncart# اور برطانیہ میں amazonbasket# کے ہیش ٹیگ استعمال کرتے ہوئے مخصوص ٹوئیٹس کے جواب دے کے کر بھی اپنی ایمازون شاپنگ کارٹ میں اشیا شامل کر سکتے ہیں۔

تاہم صارفین کو خرید کی تصدیق کے لیے اب بھی ایمازون کی ویب سائٹ پر جانا پڑے گا۔

ٹوئٹر کو ساڑھے 64 کروڑ ڈالر کا خسارہ

ڈرون کے ذریعے صارفین تک سامان کی ترسیل

سماجی روابط کی ویب سائٹوں کی مقبولیت کے پیشِ نظر مختلف کمپنیاں ان ویب سائٹوں کے ذریعے گاہک حاصل کرنے کی کوشش کر رہی ہیں۔

ڈیجیٹل تشہیر کی کمپنی لوئس پلس کے ایشیا پیسیفک خطے کی سربراہ سنجنا چاپلی کا کہنا ہے کہ ’اصل میں اہم بات وہ مکالمے ہی ہیں جو مختلف پلیٹ فارموں پر صارفین اپنی پسند کی اشیا کے بارے میں کر رہے ہیں۔‘

ان کا کہنا ہے کہ ’مختلف برینڈز ان پلیٹ فارموں کا استعمال کرنا چاہتے ہیں کیونکہ ان کے پاس کروڑوں صارفین ہیں۔‘

یہ اعلان ایک ایسے وقت آیا ہے جب چند روز قبل ہی ٹوئٹر نے اس سال کی پہلی سہ ماہی میں 13 کروڑ ڈالر سے زیادہ خسارے کا اعلان کیا تھا۔

ٹوئٹر پر صارفین کی تعداد اس سال کے پہلے تین ماہ میں ساڑھے 25 کروڑ تک پہنچ گئی ہے جو کہ گذشتہ تین ماہ کے مقابلے میں 5.8 فیصد کا اضافہ ہے، تاہم یہ ماہرین کی پیش گوئیوں کے مقابلے میں کہیں کم ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption ایمازون کو دنیا کی سب سے بڑی آن لائن دکانوں میں سے ایک سمجھا جاتا ہے، اور یہاں لاکھوں اشیا برائے فروخت ہیں

ٹوئٹر کی ترقی کی رفتار میں گذشتہ چند سالوں میں کمی دیکھی گئی ہے اور انہی خدشات کے باعث اس کی آمدنی میں کمی کا امکان ہے۔

سنجنا چاپلی کا کہنا ہے کہ ایمازون کے ساتھ شراکت داری سے ٹوئٹر کو اپنے صارفین کے ساتھ بہتر انداز میں کام کرنے کا موقع ملے گا جس کی وجہ سے اس کو ملنے والے اشتہارات میں بھی اضافہ ہوگا۔

’ٹوئٹر کے لیے نہ صرف صارفین کی تعداد اہم ہے بلکہ صارفین اس پر کتنا وقت گزارتے ہیں، یہ بھی ایک اہم عنصر ہے۔

’اس شراکت داری کے ذریعے وہ ایمازون جیسی ویب سائٹ کی مدد سے صارفین کے ساتھ اپنے تعلق کو بہتر بنا سکتے ہیں۔‘

دوسری جانب ایمازون کا کہنا ہے کہ اس شراکت سے صارفین اپنی ٹوئٹر فیڈ میں دیکھی گئی اشیا زیادہ آسانی سے خرید پائیں گے۔

اس شراکت کے بارے میں ایمازون کی جانب سے جاری کی جانے والی ایک ویڈیو میں کہا گیا ہے کہ ٹوئٹر پر دیکھی گئی اشیا کی خریداری کے لیے اب آپ کو ایپلیکیشن بدلنے، پاس ورڈ یاد رکھنے اور اشیا کو ڈھونڈنے کی ضرورت نہیں پڑے گی۔

اسی بارے میں