سرچ انجن میں نمایاں ہونے پر بلاگر کو جرمانہ

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption ریسٹورنٹ کے مالکان نے کہا ہے کہ کیرولن کے بلاگ کی وجہ سے ان کے کاروبار کو نقصان ہو رہا ہے

فرانس کے جج نے ایک ریسٹورنٹ کا خراب ریویو لکھنے والی بلاگر کے خلاف فیصلہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ ان کا یہ ریویو گوگل سرچ میں بہت نمایاں ہے۔

جج نے اپنے فیصلے میں کہا ہے کہ بلاگ کے ٹائٹل کو تبدیل کیا جائے اور بلاگر کیرولن کو ہرجانہ ادا کرنے کا کہنا ہے۔

کیرولن نے اس فیصلے کے بعد کہا کہ اس فیصلے نے سرچ انجن میں نمایاں طور پر آنے کو ایک جرم قرار دیا ہے۔

ریسٹورنٹ کے مالکان نے کہا ہے کہ کیرولن کے بلاگ کی وجہ سے ان کے کاروبار کو نقصان ہو رہا ہے۔

عدالتی دستاویزات کے مطابق گوگل سرچ پر یہ بلاگ چوتھے نمبر پر ہے۔

جج کے فیصلے کے مطابق بلاگ کا ٹائٹل ’جگہیں جہاں جانے سے گریز کریں‘ کو تبدیل کیا جائے تاکہ سرچ میں یہ اتنا نمایاں نہ ہو۔

جج نے فیصلے میں کہا کہ اس بلاگ کے باعث ریسٹورنٹ کو زیادہ نقصان اس لیے پہنچا ہے کہ کیرولن کے بلاگ کو 3000 افراد فولو کرتے ہیں۔

کیرولن نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا ’اس فیصلے نے سرچ انجن میں نمایاں ہونے یا بہت اثر و رسوخ رکھنے کو ایک جرم قرار دیا ہے۔‘

عدالت کے فیصلے میں کیرولن کو ریسٹورنٹ مالکان کو 2000 ڈالز ہرجانہ ادا کرنے کا بھی حکم دیا ہے۔

کیرولن نے اپنے بلاگ میں اگست 2013 کو اس ریسٹورنٹ کی خراب سروس اور مالکان کے غلط رویے کے بارے میں لکھا تھا۔

اسی بارے میں