ماہرین کو آئی کلاؤڈ کی سکیورٹی پر تشویش

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption ’اے گڈ ڈے ٹو ڈائی ہارڈ‘ کی اداکارہ میری الزبیتھ ونسٹیڈ نے بھی اپنی تصاویر کی تصدیق کی

ماہرین نے مشہور شخصیات کی برہنہ تصاویر لیک ہونے کے بعد ایپل کے آئی کلاؤڈ سٹوریج سائٹس کی سکیورٹی کے بارے میں خدشات کا اظہار کیا ہے۔

واضح رہے کہ ہیکروں نے آسکر انعام یافتہ اداکارہ جینیفر لارنس سمیت کئی مشہور شخصیات کی برہنہ تصاویر انٹرنیٹ پر نشر کر تھیں۔

خیال کیا جاتا ہے کہ ان میں سے بعض تصاویر ایپل کے ویب سائٹ آئی کلاؤڈ سے حاصل کی گئیں تھیں۔ آئی کلاؤڈ آلات سے ڈیٹا کو انٹرنیٹ پر بیک اپ کے طور پر سٹور کرتا ہے۔

سمجھا جاتا ہے کہ ایپل اس معاملے کی چانچ کر رہی ہے۔

ایک ماہر نے کہا کہ آئی کلاؤڈ کی خدمات استعمال کرتے ہوئے ’ذاتی ڈیٹا کو کنٹرول میں رکھنا بہت مشکل ہو جاتا ہے۔‘

ٹریپ وائر نامی ادارے کے سکیورٹی تجزیہ کار کن ویسٹین نے کہا کہ ’مشہور شخصیات اور عام لوگوں کو یہ یاد رکھنا چاہیے کہ وہ تصاویر اور ڈیٹا صرف ان آلات میں سٹور نہیں رہتا جس کے ذریعے اسے لیا گیا ہو۔‘

انھوں نے کہا کہ ’اگر آپ کلاؤڈ میں تصاویر دیکھ سکتے ہیں تو اسے ہیکر بھی دیکھ سکتا ہے۔‘

ایپل نے تاحال ابھی تک آئی کلاؤڈ کے سکیورٹی کے حوالے سے خدشات اور مشہور شخصیات کی تصاویر کے لیک کے حوالے سے کوئی تبصرہ نہیں کیا۔

تقریباً 20 مشہور شخصیات کی تصاویر شائع کی گئیں تھیں جن میں زیادہ تر خواتین کی تھیں جس میں جینیفر لارنس کے علاوہ ریانا، کیٹ اپٹن، سلینا گومیس، اور کم کاردیشین کی تصاویر شامل ہیں۔

یہ تصاویر شائع کرنے والے صارف نے اپنے آپ کو ہیکر کے بجائے’جمع کرنے والا‘ ظاہر کیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ مختلف مشہور شخصیات کی مزید تصاویر جلد شائع کر دی جائیں گی۔

کچھ ستاروں نے کہا تھا کہ ان کی تصاویر جعلی ہیں، البتہ دوسروں نے تصدیق کی کہ یہ تصاویر انھی کی ہیں۔’اے گڈ ڈے ٹو ڈائی ہارڈ‘ کی اداکارہ میری الزبیتھ ونسٹیڈ نے بھی تصدیق کی کہ یہ تصاویر انھی کی ہیں۔

اسی بارے میں