معروف ہیکر ’کیپٹن کرنچ‘ کے لیے امدادی فنڈ

تصویر کے کاپی رائٹ Aaron Getting
Image caption جان ڈریپر نے ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں مہم شروع کرنے والوں کا تہہ دل سے شکریہ ادا کیا ہے

ہیکنگ کی دنیا میں ’لیجنڈ‘ سمجھے جانے والے کیپٹن کرنچ کے نام سے معروف ہیکر جان ڈریپر کی امداد کے لیے ایک فنڈ شروع کیا گیا ہے۔

71 سالہ ڈریپر متعدد بیماریوں میں مبتلا ہونے کے بعد ہسپتال میں داخل ہوئے تھے۔

وہ امریکہ کے ان چند ہیکرز میں سے ہیں جنھوں نے پہلی مرتبہ امریکی فون نیٹ ورکس کو ہیک کیا تھا۔

کراؤڈ فنڈنگ ویب سائٹ ’قک فنڈر‘ پر شروع کی گئی مہم کا مقصد پانچ ہزار امریکی ڈالر جمع کرنا ہے تاکہ صحتیابی تک جان ڈریپر کے روزمرہ کے اخراجات کا انتظام ہو سکے۔

یہ مہم شروع کرنے والے خود کو ڈریپر کا دوست قرار دیتے ہیں اور ویب سائٹ پر انھوں نے اپنے پیغام میں کہا ہے کہ ’یہ فنڈ اس لیے شروع کیا گیا ہے تاکہ وہ اپنی بہتری پر توجہ دے سکیں۔‘

اس مہم کے دوران اب تک 4800 ڈالر سے زیادہ جمع ہو چکے ہیں اور جان ڈریپر نے ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں یہ مہم شروع کرنے والوں کا ’تہہ دل سے شکریہ‘ ادا کیا ہے۔

جان ڈریپر رواں برس اگست میں ریڑھ کی ہڈی میں تکلیف کی وجہ سے ہسپتال میں داخل ہوئے تھے جہاں دو مرتبہ ان کا آپریشن ہو چکا ہے اور علاج میں پیچیدگیوں کی وجہ سے وہ ایک ماہ سے زیادہ عرصہ گزرنے کے بعد بھی ہسپتال میں ہی ہیں۔

ڈریپر کو کیپٹن کرنچ کی عرفیت اس دریافت پر ملی تھی کہ اسی نام کے ایک کارن فلیکس کے ملنے والی کھلونا سیٹی سے نکلنے والی آواز اس فریکوئنسی کی ہے جو اے ٹی این ٹی کے فون نیٹ ورک کے کچھ افعال کنٹرول کرتی ہے۔

اس فریکوئنسی پر تجربات کر کے جان ڈریپر نے ایک برقی ’بلیو باکس‘ تیار کیا جس کی مدد سے امریکی فون نیٹ ورکس پر جزوی کنٹرول حاصل کر کے مفت فون کالیں کی جا سکتی تھیں۔

ایپل کے بانیان سٹیو جابز اور ووزنیئیک نے اسی ’بلیو باکس‘ کو کالجوں کے طلبا کو فروخت کر کے اپنی کمپنی کی بنیاد رکھنے کے لیے ابتدائی رقم جمع کی تھی۔

ایپل کے قیام کے بعد جان ڈریپر وہاں بطور سافٹ ویئر پروگرامر بھی کام کرتے رہے تھے۔

اسی بارے میں