مشرقی ایشیا میں ’بلڈ مون‘ یا لہو رنگ چاند گرہن

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ فضا میں پھیلی سورج کی شعاؤں کے سبب گرہن کے دوران چاند لہو رنگ نظر آئے گا

امریکہ کے بیشتر اور ایشیا کے بعض حصوں میں آنے والے چند گھنٹوں کے دوران مکمل چاند گرہن ہوگا۔

یہ چاند گرہن گرینچ کے معیاری وقت کے مطابق آٹھ بجے شروع ہوگا اور 10:25 منٹ پر مکمل ہوگا۔

واضح رہے کہ یہ اس سال ہونے والا دوسرا چاند گرہن ہے۔ زمین کا یہ واحد قدرتی سیارہ ہے پوری طرح زمین کے عکس کے زیرِ اثر چھپ جائے گا۔

آج کے گرہن کے دوران چاند نارنجی یا لال نظر آئے گا اور اس کا سبب ہماری فضا میں پھیلی سورج کی شعائیں ہوں گی۔ یہی وجہ ہے کہ اس چاند گرہن کو ’بلڈ مون‘ یا ’خون چاند‘ یا ’لہورنگ چاند‘ کہا جا رہا ہے۔

اگر موسم نے اجازت دی تو شمالی امریکہ، آسٹریلیا، مغربی جنوبی امریکہ اور مشرقی ایشیا کے بعض حصوں میں ستاروں کو دیکھنے کے شائقین اور آسمان پر نگاہیں رکھنے والے افراد اس کا نظارہ کر سکیں گے۔

پاکستان میں چاند نکلتے وقت چاند گرہن کی ہلکی سی جھلک دیکی جا سکتی ہے جبکہ بھارت کے مشرقی علاقوں میں یہ ذرا دیر تک نظر آ سکتا ہے۔

یورپ، افریقہ اور برازیل کے مشرقی حصے میں رہنے والے افراد اسے نہیں دیکھ پائیں گے۔

اس سے قبل مکمل چاند گرہن رواں سال 15 اپریل کو ہوا تھا جبکہ کے آئندہ مکمل چاند گرہن اگلے سال سنہ 2015 میں چار اپریل کو متوقع ہے۔

واضح رہے کہ اس سال کی طرح آئندہ سال بھی دو بار مکمل چاند گرہن ہوگا۔

اسی بارے میں