مائیکروسافٹ کے سربراہ کی خواتین سے معذرت

تصویر کے کاپی رائٹ AP

مائكروسافٹ کے سربراہ ستيا نڈیلا نے خاتون ملازمین کے بارے میں اپنے ایک حالیہ تبصرے پر معذرت طلب کی ہے۔

یاد رہے کہ انہوں نے خواتین سے کہا تھا کہ انہیں تنخواہ میں اضافہ کا مطالبہ کرنے کی بجائے نظام پر یقین رکھنا چاہیے۔

تکنیکی شعبے میں خواتین کی شراکت پر ہونے والے ایک سیمنار میں انہوں نے کہا تھا کہ خواتین اگر تنخواہ میں اضافہ کا مطالبہ نہیں کرتی ہیں تو یہ ’اچھا کام‘ ہے۔

اپنے ملازمین کو لکھی گئی ایک ای میل میں انہوں نے کہا ہے کہ میں نے سوال کا بالکل غلط جواب دیا تھا اور میں مرد دزن کی تنخواہ میں فرق کو کم کرنے کے پروگراموں کی دل سے حمایت کرتا ہوں۔

سیمینار کے دوران ایک سوال کے جواب میں ستيا نڈیلا نے کہا تھا کہ ’یہ تنخواہ اضافہ مانگنے کے بارے میں نہیں ہے بلکہ یہ جاننے اور یقین کرنے کے بارے میں ہے کہ جیسے آپ آگے بڑھیں گی نظام آپ کو خود ہی تنخواہ میں مناسب اضافہ دے گی۔ کیونکہ یہ اچھا کام ہے۔‘

اس سیمینار کے دوران نڈیلا کا انٹرویو کرنے والی ماریا كلاوے نے فورا نڈیلا کے جواب کو مسترد کر دیا تھا۔ ماریا كلاوے خود بھی مائیکروسافٹ میں ہی کام کرتی ہیں۔

اس تبصرے کی وجہ سے نڈیلا کو ٹوئٹر پر شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ اس کے بعد انہوں نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ اپنی بات صحیح سے نہیں حاضرین کے سامنے نہیں رکھ پائے تھے۔

اب ایک ای میل میں انہوں نے کہا ہے کہ ماریا نے مجھ سے ان خواتین کو مشورہ دینے کے بارے میں پوچھا تھا جو تنخواہ میں اضافہ کا مطالبہ نہیں کر پاتی ہیں۔ میں نے اس سوال کا بالکل غلط جواب دیا تھا۔

انہوں نے لکھا کہ ’میں عورتوں اور مردوں کو ایک جیسی تنخواہ دیے جانے کی حمایت کرتا ہوں۔‘

انہوں نے کہا کہ خواتین کو جب بھی لگتا ہے کہ ان کو تنخواہ اضافہ ملنی چاہیے انہیں تب ہی اسے مانگ لینا چاہیے۔

ہندوستانی نژاد ستيا نڈیلا اسی سال مائیکروسافٹ کے سربراہ بنے ہیں۔

اسی بارے میں