مائیکرو سافٹ نے ونڈوز 7 اور 8 کی فروخت بند کر دی

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption صارفین میں ونڈوز 8 بہت زیادہ مقبول نہیں ہوئی کیونکہ اس کے ڈیسک ٹاپ ورژن سے بعض جانے پہچانے عناصر یا فیچرز ختم کر دیے گئے تھے

ٹیکنالوجی کی کمپنی مائیکرو سافٹ نے ونڈوز 7 اور 8 کے بعض ورژنز کی پرچون فروخت بند کر دی ہے۔

اس سافٹ ویئر کی فروخت کو بند کرنے کے تاریخ کا فیصلہ کچھ وقت پہلے کیا گیا تھا جس کا مقصد صارفین کو ونڈوز آپریٹنگ سسٹم کے نئے ورژنز کی طرف مائل کرنا ہے۔

علاوہ ازیں اعداد و شمار سے معلوم ہوتا ہے کہ صارفین ونڈوز کے پرانے ورژن کو استعمال کرنا چھوڑ رہے ہیں۔

ونڈوز کا نیا ورژن جسے ونڈوز 10 کا نام دیا گیا ہے، سنہ 2015 کے اواخر میں جاری کیا جائے گا۔

صارفین 31 اکتوبر سے ونڈو 7 کے ہوم بیسک، ہوم پریمیئم اور الٹیمیٹ ورژن نہیں خرید سکیں گے جبکہ ونڈو 8 بھی دستیاب نہیں ہے۔ اس تبدیلی سے دکانوں سے لی گئی کاپیاں اور کمپیوٹرز اور لیپ ٹاپس پر پہلے سے انسٹال شدہ سافٹ ویئر متاثر ہوں گے۔

ونڈوز کا موجودہ 8.1 کمپیوٹرز پر ڈیفالٹ ورژن ہوگا۔

مارکیٹ یہ تبدیلی آنے میں وقت لگے گا کیونکہ کمپیوٹر بنانے والے کمپنیوں کے پاس ونڈوز کے پرانے ورژنز کا بہت بڑا ذخیرہ ہے اور وہ کچھ عرصے تک اسی سافٹ ویئر کے ساتھ کمپیوٹرز فروخت کرتے رہیں گے۔

جو صارفین کمپیوٹر چلانے کے لیے ونڈوز 7 میں دلچسپی رکھتے ہیں وہ ونڈوز 8.1 کو ونڈوز 7 پروفیشنل پر ڈاؤن گریڈ کر سکیں گے۔

گورڈن کیلی نے فوربز میگزین میں لکھتے ہوئے کہا کہ اس پالیسی سے ظاہر ہوتا ہے کہ ’مائیکرو سافٹ ونڈو 8 کو ترک کرنا چاہتی ہے حالانکہ اسے دو سال پہلے ہی جاری کیا گیا تھا۔‘

صارفین میں ونڈوز 8 بہت زیادہ مقبول نہیں ہوئی کیونکہ اس کے ڈیسک ٹاپ ورژن سے بعض جانے پہچانے عناصر یا فیچرز غائب کر دیے گئے تھے۔

گورڈن کیلی نے کہا کہ اس کے برعکس ونڈوز 7 سنہ 2009 سے دستیاب ہے لیکن یہ صارفین میں اب تک مقبول ہے۔ ونڈوز کے 53 فیصد صارفین ونڈوز 7 کے مختلف ورژنز استعمال کرتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ونڈوز 8 کا حصہ صرف چھ فیصد ہے جبکہ ونڈوز 8.1 بھی اس سے زیادہ فروخت ہوئی ہے۔

اسی بارے میں