پائریٹ بے کے شریک بانی تھائی لینڈ میں گرفتار

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption فریڈریک لینارٹ نیج اپنی ضمانت پر رہائی کے دوران سویڈن سے بھاگ نکلے تھے

تھائی پولیس کے مطابق فائل شیئر کرنے والی ویب سائٹ پائریٹ بے کے شریک بانی ہینز فریڈریک لینارٹ نیج کو لائوس سے تھائی لینڈ میں داخل ہونے کے وقت گرفتار کیا گیا ہے۔

فریڈریک لینارٹ نیج سویڈن کے شہری ہیں جنھیں ہیکرز تائیمو کے نام سے جانتے ہیں۔ انھیں تھائی لینڈ کے شمال مشرقی قصبے ننگ خائی میں گرفتار کیا گیا۔

انھیں سنہ 2009 میں کاپی رائٹ کے حقوق کی خلاف ورزی کرنے میں مدد کرنے کا مجرم قرار دیا گیا تھا جس کے بعد ان کی گرفتاری کے وارنٹ جاری کیے گئے تھے۔

پائریٹ بے مہنگے ترین انٹر نیٹ مواد تک رسائی فراہم کرتا ہے اور یہ دنیا کی سب سے زیادہ استعمال ہونے والی ویب سائٹس میں سے ہے۔

36 سالہ فریڈریک لینارٹ نیج کو پانچ سال قبل سویڈن کے ایک عدالت نے مجرم قرار دیا تھا۔ ان سمیت تین دیگر افراد کو عدالت نے ایک سال سزا دی تھی اور انھیں ہرجانے کے طور پر 36 لاکھ امریکی ڈالر ادا کرنے کا حکم دیا تھا۔

فریڈریک لینارٹ نیج اپنی ضمانت پر رہائی کے دوران سویڈن سے بھاگ نکلے تھے۔

تھائی لینڈ کے علاقائی پولیس سربراہ چارتاچی ایمسانگ نے صحافیوں کو بتایا کہ ’فریڈریک لینارٹ کو اس وقت گرفتار کیا گیا جب وہ لاؤس سے تھائی لینڈ میں داخل ہونے کی کوشش کر رہے تھے۔ وہ سنہ 2012 سے لاؤس میں رہے تھے۔‘

انھوں نے کہا کہ فریڈریک لینارٹ سنہ 2012 سے لائوس میں رہ رہے تھے اور وہ تقریباً 30 دفعہ تھائی لینڈ آ چکے ہیں جہاں سیاحتی مقام پھوکٹ جزیرے پر ان کا ایک مکان ہے۔‘

پائریٹ بے کے ایک اور شریک بانی گوٹفرڈ وارگ کو سنہ 2012 میں کمبوڈیا میں گرفتار کرکے سویڈن بھیج دیا گیا تھا تاکہ وہ غیر قانونی طور پر انٹرنیٹ پر مواد تک رسائی کے جرم میں ملنی والی سزا پوری کر سکے۔

اسی بارے میں