کانوں کے بغیر بچے کی خواہش پوری

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption کائرن سورکن جب پیدا ہوئے تو ان کے کانوں کی جگہ چھوٹی چھوٹی لویں تھیں

لندن کے علاقے ہرٹفورڈ شائر میں کانوں کے بغیر پیدا ہونے والے ایک بچے کی پہلی بار دھوپ کا چشمہ پہننے کی خواہش پوری کر دی گئی ہے۔

ہرٹفورڈ شائر سے تعلق رکھنے والے نو سالہ کائرن سورکن کو جمعرات کو ہسپتال میں بتایا گیا کہ ان کے زخم اب اتنے بھر گئے ہیں کہ وہ چشمہ پہن سکتے ہیں۔

خیال رہے کہ نو سالہ کائرن سورکن جب پیدا ہوئے تو انھیں بائی لیٹرل مائیکروشیا نامی بیماری تھی اور ان کے کان غیر معمولی طور پر چھوٹے تھے، جس کا مطلب یہ ہے کہ جہاں ان کے کان ہونے چاہیے تھے، وہاں صرف چھوٹی چھوٹی لویں تھیں۔

کائرن سورکن کے نئے کان تیار کرنے کے لیے گذشتہ موسم گرما میں ایک آپریشن کے ذریعے ان کی پسلیوں سے کرکری ہڈی (کارٹلیج) لی گئی، پھر لندن میں قائم گریٹ اورمنڈ سٹریٹ ہسپتال میں کائرن سورکن کا آپریشن کیا گیا۔

اس کے بعد نئے کانوں کو اٹھانے اور ان کی سمت درست کرنے کے لیے فروری میں دوسرا آپریشن کیا گیا۔

ان کے نئے کانوں کے لیے سر کے اوپری حصے کی کھال لی گئی۔

جمعرات کو سرجن نیل بلسٹروڈ نے کائرن سورکن کو بتایا کہ رواں برس آنے والی گرمیوں سے پہلے اب وہ دھوپ کا چشمہ استعمال کر سکتے ہیں۔

کائرن سورکن نے فوراً ہی اپنے نئے کانوں پر چشمہ لگایا اور خود کو شیشے میں دیکھ کر کہا ’بہت خوب!‘

ان کا مزید کہنا تھا ’سرجن نیل بلسٹروڈ دنیا کے بہترین سرجن ہیں جنھوں نے میری خواہش پوری کی ہے۔‘

کائرن سورکن کی والدہ اور خاندان نے اس آپریشن کی کامیابی پر خوشی کا اظہار کیا ہے۔

ان کی والدہ کا کہنا تھا: ’کائرن سورکن نے اس سفر میں بہت بہادری کا مظاہرہ کیا اور آج آنے والے نتائج بہت زبردست ہیں۔‘

ان کا کہنا تھا کہ ہم جانتے ہیں کہ ہم نے کائرن کی سرجری کروانے کا درست فیصلہ کیا۔

اسی بارے میں