گوگل 12 ڈالر میں خریدنے والے کو انعام

تصویر کے کاپی رائٹ Thinkstock
Image caption گوگل ڈاٹ کام کا ڈومین نیم اس کی اپنی ویب سائٹ پر فروخت کے لیے پیش کیا جا رہا تھا

آن لائن سرچ کمپنی گوگل نے ایک شخص کو گوگل ڈاٹ کام کو تھوڑی دیر کے لیے خرید لینے پر نقد رقم انعام دیا ہے۔

29 ستمبر کو کمپنی کی انتظامیہ کی غلطی کی وجہ سے ایک امریکی طالب علم سینمے ویڈ نے کمپنی کی ڈومین کو کنٹرول کرنے کا حق خرید لیا۔

گوگل کا نیا لوگو متعارف کروا دیا گیا

اس غلطی سے وہ ایک منٹ کے لیے گوگل ڈاٹ کام کے مالک بن گئے جس کے بعد گوگل نے اپنی غلطی کا احساس کرتے ہوئے اس سودے کو منسوخ کر دیا۔

ویڈ کو گوگل کی غلطی ڈھونڈنے پر نقد رقم انعام میں دی گئی ہے جسے انھوں نے خیرات میں تقسیم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

گوگل نے اس واقعے پر تبصرہ کرنے سے انکار کیا ہے۔

ویڈ نے اپنے تجربے کی تفصیل ویب سائٹ ’لنکڈ ان‘ پر یہ کہتے ہوئے لکھی کہ وہ گوگل سے منسلک ویب ڈومینز پر نظر رکھتے تھے کیونکہ وہ پہلے گوگل میں ملازمت کرتے تھے۔

ویڈ اس وقت ایک امریکی کالج میں ایم بی اے کے طالب علم ہیں۔

29 ستمبر کی صبح ویڈ نے گوگل کی ویب سائٹس خریدنے والی سروس پر گوگل ڈاٹ کام کے نام کے ساتھ ’برائے فروخت‘ لکھا ہوا دیکھا۔

انھوں نے اپنے کریڈٹ کارڈ سے 12 ڈالر میں ویب سائٹ خرید لی اور اس کے فوراً بعد انھیں گوگل کی ویب انتظامیہ ٹیم کی طرف سے ای میلز ملنا شروع ہو گئیں۔

اس کے بعد انھیں گوگل سے منسوخی کا پیغام ملا کہ وہ گوگل ڈاٹ کام نہیں خرید سکتے کیونکہ یہ تو پہلے ہی سے رجسٹرڈ ہے۔ ان کی 12 ڈالر کی رقم بھی انھیں واپس مل گئی۔

اب یہ پتہ چلا ہے کہ ویڈ کو ڈومین خریدنے کے نظام میں خامی ڈھونڈنے پر گوگل کی سکیورٹی ٹیم کی طرف سے ایک ’بڑا انعام‘ دیا گیا ہے۔

تاہم ویڈ نے یہ انعامی رقم ایک بھارتی تعلیمی فاؤنڈیشن کو خیرات میں دینے کا فیصلہ کیا ہے، جس کے بارے سن کر گوگل نے اپنا انعام دگنا کر دیا۔

اسی بارے میں