’گوگل انسداد اجارہ داری محکمے کے فیصلے کو چیلنج کرے گا‘

تصویر کے کاپی رائٹ GOOGLE
Image caption زیادہ تر مسئلہ یو ٹیوب، گوگل کی فوٹوگرافی اور میپ یا نقشوں کے اپیلکیشن سے متعلق ہے

آئی ٹی کمپنی گوگل کا کہنا ہے کہ روس میں بعض موبائل فونز میں اینڈروئڈ ایپلکیشن پہلے سے انسٹال کرنے کے خلاف فیصلے کو عدالت میں چیلنج کرے گا۔

روس کی وفاقی انسدادِ اجارہ داری کے محکمۂ نے کہا ہے کہ گوگل اپنی پوزیشن کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے موبائل فون کی کمپنوں کو ایپس ڈاؤن لوڈ کرنے کے بارے میں احکامات دے رہا ہے۔

زیادہ تر مسئلہ یو ٹیوب، گوگل کی فوٹوگرافی اور میپ یا نقشوں کے اپیلکیشن سے متعلق ہے۔

دوسری جانب گوگل کا کہنا ہے کہ کسی بھی کمپنی کو اپیلکیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے بارے میں نہیں کہا گیا اور روس میں اُس کی سروسز کو بہت سخت مقابلے کا سامنا ہے۔

رواں سال ستمبر میں روس کی انسدادِ اجارہ داری کے محکمے نے گوگل کو موبائل فون کمپنیوں کے ساتھ معاہدے میں تبدیلی کے لیے 18 نومبر تک کا وقت دیا تھا۔

ادارے کا کہنا تھا کہ ایسے نہ کرنے پر گوگل کو سنہ 2014 میں روس کی مارکیٹ سے حاصل ہونے والی آمدن کا 15 فیصد جرمانے کی صورت میں ادا کرنا ہو گا۔

گوگل نے اس فیصلے پر عمل درآمد نہیں کیا اور اب اپنے روسی بلاگ پر وضاحت جاری کی ہے۔ ’ہم اس فیصلے کو عدالت میں چیلنج کریں گے اور وضاحت کریں گے کہ یہ کیوں بے بنیاد ہے۔‘

گلوگل نے اپنی اینڈروئڈ اپیلیکشن کے ساتھ مواقف رویے کے الزام پر کہا کہ اس کے بہت کم شواہد ملے ہیں اور گوگل نے اپنی دلیل کی حمایت میں پانچ وضاحتیں بھی دی ہیں۔

روس کے انسدادِ اجارہ داری کے محکمے نے گوگل کے اعلان کے بعد اپنا ردِعمل جاری نہیں کیا۔ تاہم روسی سرچ انجن ینڈکس کا کہنا ہے کہ وہ عوامی سماعت میں گوگل کے معاملے کی تحقیقات کے لیے تیار ہے۔ ’ینڈکس اس معاملے پر اپنی پوزیشن سے متعلق ہر نکتے پر پراعتماد ہے۔‘

اسی بارے میں