ناسا نے آلے میں خرابی کے بعد مریخ مشن معطل کر دیا

امریکہ کی خلائی ایجنسی ناسا نے تحقیق کے ایک اہم آلے میں پیدا ہونے والی خرابی کے بعد آئندہ برس مارچ سے شروع ہونے والے اپنے مریخ مشن کو معطل کر دیا ہے۔

ناسا کا کہنا ہے کہ فرانس کی خلائی ایجنسی کی جانب سے فراہم کیے جانے والے آلے میں خرابی کا مطلب ہے کہ اس کا مریخ مشن شروع نہیں ہو سکتا۔

مریخ کا موسم شمسی اثرات کی وجہ سے تباہ ہوا

مریخ پر زندگی موجود ہے؟

ناسا کے مطابق آلے میں پیدا ہونے والی خرابی سے اس بات کا خدشہ ہے کہ اس مشن کو اب دو سال کی تاخیر کا سامنا ہو سکتا ہے۔

ان سائٹ خلائی جہاز کو آئندہ برس چار سے 30 مارچ کے دوران خلا میں جانا تھا جہاں اسے چھ ماہ بعد سرخ سیارے پر اتر کر مریخ کی سطح کا گہرائی سے مطالعہ کرنا تھا۔

ناسا کا کہنا ہے کہ اس نے مریخ مشن کو معطل کرنے کا فیصلہ تحقیق کے آلے میں پیدا ہونے والی خرابی کو درست کرنے میں ناکامی کے بعد کیا ہے۔

خبر رساں ادارے اے ایف پی نے ناسا کے جان گرنسفیلڈ کے حوالے سے بتایا ہے کہ مریخ مشن کے بارے میں فیصلہ آئندہ مہینوں کے دوران کیا جائے گا تاہم یہ بات بالکل واضح ہے کہ ناسا مریخ کی سائنسی دریافت اور معلومات کے حصول کے اپنے عزم پر مکمل طور پر قائم ہے۔

اسی بارے میں