کرسمس کا سامان خلا میں پہنچ گیا

تصویر کے کاپی رائٹ NASA
Image caption سامان لے جانے والی خلائی گاڑی کو پیر کو روانہ ہوئی تھی

کرسمس کے لیے خوراک اور دیگر اشیا لادے ہوئے روس کی خلائی گاڑی بین الاقوامی خلائی سٹیشن پہنچ گئی ہے۔

سامان لے جانے والی خلائی گاڑی کو پیر کو قزاقستان کے خلائی سٹیشن بیکانور کوسموڈروم سے روانہ کیا گیا تھا۔

’خلا میں زندگی کیسی ہےجلد بتاؤں گا‘

سفر کے دو روز بعد بدھ کو بوقت 10:27 جی ایم ٹی، پروگریس 62P نامی گاڑی خودکار طریقے سے خلائی سٹیشن سے متصل ہو گئی۔

ایک بار جب عملہ اپنی جانچ پڑتال مکمل کر لے گا تو اُس کے دروازے کھول دیے جائیں گے اور سامان اُتارنے کی اجازت دے دی جائے گی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Tim Peake
Image caption پیک چھ مہینوں کے لیے 15 دسمبر کو سوئیز نامی خلائی جہاز کے ذریعے بین الاقوامی خلائی سٹیشن پہنچے تھے

پیر کو برطانوی خلا باز ٹم پیک نے پروگریس خلائی جہاز کی آمد سے قبل خلا میں چہل قدمی کرتے ہوئے خلائی سٹیشن کے پرزے صحیح کرنے کی کوشش کی تھی۔

عملے کے امریکی ارکان سکاٹ کیلی اور ٹم کوپرا نے خلائی سٹیشن کے باہر ’ریل کار‘ کو جِس جگہ رکھا گیا تھا اُسے وہاں سے ہٹا کر چند اِنچ دور منتقل کر دیا، تاکہ وہ پروگریس کی آمد سے قبل اپنی جگہ بنا سکے۔

پیک چھ مہینوں کے لیے 15 دسمبر کوسویز نامی خلائی جہاز کے ذریعے بین الاقوامی خلائی سٹیشن پہنچے تھے۔

میر خلائی سٹیشن پر ایک ہفتہ گزارنے والی ہیلن شرمین کے بعد ٹم پیک خلا میں سفر کرنے والے پہلے برطانوی خلاباز ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ tim peake
Image caption دن کے رات میں ڈھلنے کا منظر

روس کی خلائی ایجنسی روسکوس موس کے مطابق بغیر پائلٹ کے کارگو جہاز میں 2,436 کلوگرام کا سامان ہے، جس میں راکٹ کے انجن کے لیے ایندھن، آکسیجن، پانی اور کھانا شامل ہے۔

پروگریس نامی اِس جہاز کو حال ہی میں اپ گریڈ کیا گیا ہے۔ اِس میں نئے کمانڈ اور ٹیلی میٹری سسٹم کی تنصیب اور کرس ریڈار کا بہتر ورژن بھی اِستعمال کیا گیا ہے۔

اسی بارے میں