شہنشاہ تتلیوں کی آبادی میں 250 فیصد اضافہ

تصویر کے کاپی رائٹ AP

ماہرین کا کہنا ہے کہ موسمِ سرما میں میکسیکو کا رخ کرنے والی ’مونارک‘ یا شہنشاہ تتلیوں کی آبادی میں گذشتہ برس کے مقابلے میں ڈھائی سو فیصد کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔

نارنجی اور سیاہ رنگ والی یہ مخصوص تتلیاں سرد موسم سے قبل ہر برس کینیڈا اور امریکہ سے ہزاروں میل کا سفر طے کر کے میکسیکو آتی ہیں۔

میکسیکن حکام کے مطابق رواں برس موسمِ سرما میں جن مقامات پر یہ تتلیاں پھیلی ہوئی پائی گئی تھیں ان کا رقبہ چار ہیکٹر سے کچھ زیادہ ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ گذشتہ برس یہ رقبہ ایک ہیکٹر کے برابر تھا۔

تاحال تتلیوں کی آبادی میں اتنے بڑے اضافے کی وجہ کا تعین نہیں کیا جا سکا ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ ان تتلیوں کی جانب سے افزائشِ نسل کے لیے استعمال کیے جانے والے ایک مخصوص پودے کی امریکہ میں کاشت کے پروگرام نے ممکنہ طور پر اس میں اہم کردار ادا کیا ہے۔

تاہم انھوں نے خبردار کیا ہے میکسیکو میں پائن اور فر کے جنگلات کی کٹائی سے وہاں اتنی بڑی تعداد میں تتلیوں کی آمد کا سلسلہ ختم ہو سکتا ہے کیونکہ یہی وہ درخت ہیں جن پر قیام کرنا ان تتلیوں کو پسند ہے۔